’’ سرسید احمد خاں اور دورِ حاضر کے چیلنجیز‘‘ موضوع پر قومی سیمینار کا انعقاد

’’ سرسید احمد خاں اور دورِ حاضر کے چیلنجیز‘‘ موضوع پر قومی سیمینار کا انعقاد

ماہنامہ دا علی گڑھ موومینٹ کے زیرِ اہتمام14؍اکتوبرکو علی گڑھ مسلم یونیورسٹی پالی ٹیکنک کے اسمبلی آڈیٹوریم میں صبح11.00بجے ’’ سرسید احمد خاں اور دورِ حاضر کے چیلنجیز‘‘ موضوع پر قومی سیمینار کا انعقاد
علی گڑھ12؍اکتوبر:
بصیرت نیوزسروس
’’ ماہنامہ دا علی گڑھ موومینٹ ‘‘کے زیرِ اہتمام جدید ہندوستان کے معمار، عظیم مصلح قوم اور علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بانی سرسید احمد خاں کی دو صد سالہ یومِ پیدائش تقریبات کے موقعہ پر ہر سال کی طرح امسال بھی14؍اکتوبر2017کو علی گڑھ مسلم یونیورسٹی پالی ٹیکنک کے آڈیٹوریم میں صبح11.00بجے ’’ سرسید احمد خاں اور دورِ حاضر کے چیلنجیز‘‘ موضوع پر قومی سیمینار کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔
ماہنامہ دا علی گڑھ موومینٹ کے مدیرِ اعلیٰ اور سیمینار کے ڈائرکٹر ڈاکٹر جسیم محمد نے میڈیا سینٹر ، علی گڑھ پر منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ مذکورہ قومی سیمینار کے مہمانِ خصوصی حکومتِ ہند کے قومی اقلیتی کمیشن کے چیئرپرسن مسٹر سید غیور الحسن رضوی ہوں گے جبکہ فینس نئی دہلی کی پربھاری محترمہ ریشما ایچ سنگھ اور جامعہ اردو علی گڑھ کے اویس ڈی مسٹر فرحت علی خاں پروگرام کے اعزازی مہمانان ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ سیمینار کی صدارت علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے ذاکر حسین کالج برائے انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے سابق پرنسپل پروفیسر رضاء اللہ خاں کریں گے۔
ڈاکٹر جسیم محمد نے بتایا کہ مذکورہ پروگرام میں جامعہ اردو علی گڑھ کے او ایس ڈی مسٹر فرحت علی خاں، اپکار سنستھان علی گڑھ کے صدر مسٹر وشنو کمار بنٹی، اے ایم یو کی آرٹس فیکلٹی کے سابق ڈین پروفیسر شیخ مستان،غازی پور کے ممتاز قلم کار و نقاد جناب عبید الرحمن صدیقی اور سوچ آرگنائزئشن کے صدر ڈاکٹر سلیم محمد خاں کو ان کی عظیم خدمات کے اعتراف میں مہمانِ خصوصی کے دستِ مبارک سے سر سید ایکسیلینس ایوارڈ۔2017سے سرفراز کیا جائے گا۔
انہوں نے بتایا کہ اس موقعہ پر سر سید مضمون نویسی مقابلہ کے فاتحین کو مہمانِ خصوصی انعام کی نقد رقم، یادگاری نشانات اور ممتاز فلم ساز اور سماجی کارکن مسٹر مہیش بھٹ کے دستخط سے جاری سرٹیفکیٹ سے سرفراز کریں گے۔
ڈاکٹر جسیم محمد نے بتایا کہ ماہنامہ دا علی گڑھ موومینٹ کی اشاعت کا مقصد سرسید کے مشن کو اور نوجوان نسل میں سرسید شناسی کو فروغ دینا ہے۔
پریس کانفرنس میں ڈاکٹر جی ایف صابری، ڈاکٹر شیریں مسرور، ڈاکٹر فاطمہ زہرہ اور صدف زیزی موجود تھیں۔