ایک ہندوستانی سے امریکی شہریت واپس لے لی گئی

ایک ہندوستانی سے امریکی شہریت واپس لے لی گئی

واشنگٹن:10؍جنوری(بی این ایس)
امریکی شہریت حاصل کرنے والے ایک ہندوستانی شخص سے اس کی امریکی شہریت واپس لے لی گئی ہے۔ ٹرمپ انتظامیہ کی طرف سے دغا بازی کے ذریعے امریکی شہریت حاصل کرنے والوں کے خلاف کارروائی میں شدت لائے جانے کے بعد یہ ایسا پہلا شکار ہے۔
خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی ریاست نیوجرسی کے شہر کارٹریٹ سے تعلق رکھنے والا 43 سالہ بلجندر سنگھ ایک امریکی خاتون سے شادی کے بعد 2006ء میں امریکی شہری بنا تاہم وہ 1991ء میں امریکا پہنچا تھا۔ امریکی محکمہ انصاف کے مطابق یہ شخص سفری یا شناختی دستاویزات کے بغیر سان فرانسسکو پہنچا اور اپنی شناخت دوندر سنگھ کے نام سے درج کرائی۔جنوری 1992ء میں ایک عدالت کی طرف سے اسے ملک بدر کرنے کا حکم جاری کیا گیا تاہم وہ اس کارروائی سے بچ نکلنے میں کامیاب ہو گیا اور ایک ماہ بعد ہی اس نے بلجندر سنگھ کے نام سے سیاسی پناہ حاصل کرنے کی درخواست جمع کرا دی تھی۔اب ایک امریکی عدالت نے اس کی امریکی شہریت منسوخ کرتے ہوئے اسے امریکہ میں رہائش کا قانونی اجازت نامہ جاری کر دیا ہے، جس کا مطلب ہے کہ اب اسے ملک سے بے دخل کیے جانے سے متعلق کارروائی کا آغاز ہو سکے گا۔
امریکہ کی شہریت اور تارکین وطن سے متعلق سروسز کے ڈائریکٹر فرانسس سیسنا کے مطابق، ’’امید ہے کہ اس مقدمے اور اس کے بعد آنے والے مقدمات سے ایک واضح پیغام جائے گا کہ غلط طریقے سے حاصل شدہ امریکی شہریت کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔‘‘
امریکی محکمہ انصاف کے مطابق ’آپریشن جینس‘ کے تحت امریکی شہریت واپس لیے جانے کا پہلا واقعہ ہے۔ یہ آپریشن امریکی داخلی سلامتی کے محکمے کی طرف سے کافی عرصہ قبل شروع کیا گیا تھا۔گزشتہ برس ستمبر میں اس آپریشن کے دوران تین لاکھ پندرہ ہزارکیسز کی تلاش کی گئی جن میں امریکی شہریت حاصل کرنے والوں کی انگلیوں کے نشانات موجود نہیں تھے۔ جس کے بعد یہ خدشات سامنے آئے کہ ان میں سے بعض نے امریکی شہریت حاصل کرنے کے عمل کے دوران اپنا سابقہ مجرمانہ ریکارڈ چھپانے کے لیے ایسا کیا ہوگا۔