پشاور میں خودکش حملہ، متعدد افراد ہلاک اور زخمی

پشاور میں خودکش حملہ، متعدد افراد ہلاک اور زخمی

اسلام آباد: 11؍جولائی(بی این ایس؍ایجنسی)
ابتدائی میڈیا رپورٹس کے مطابق پشاور کے یکہ توت علاقے میں منگل کی شام اس وقت ایک بم دھماکہ ہوا جب عوامی نیشنل پارٹی اے این پی کے امیدوار اپنے حلقہ انتخاب میں کارنر میٹنگ میں موجو د تھے۔
رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ ہلاک ہونے والوں میں اے این پی کے میدوار ہارون بلور بھی شامل ہیں جو ممکنہ طور پر حملے کا نشانہ تھے۔
ہارون بلور، سابق سینیئر صوبائی وزیر بشیر احمد بلور کے صاحب زادے ہیں جنہیں سن 2012 میں پاکستانی طالبان کے ایک بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا کر ہلاک کر دیا تھا۔
میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ حملہ خود کش تھا، جس کی زد میں آکر چار افراد ہلاک اور کئی زخمی ہوئے۔
پاکستان کے اس شمال مغربی صوبے میں اے این پی ایک عرصے سے عسکریت پسند گروہوں کا ہدف بنی ہوئی ہے۔ طالبان عسکریت پسند ، فوجی آپریشن سے پہلے زیادہ تر خیبر پختون خوا کے مختلف حصوں میں سرگرم تھے اور یہاں سے وہ ملک کے دوسرے علاقوں میں بھی حملے کرتے تھے۔ تاہم فوج کی جانب سے بڑے آپریشن کے بعد زیادہ تر طالبان سرحد پار أفغانستان میں روپوش ہو چکے ہیں اور کبھی کبھار سرحد کے قریب واقع علاقوں پر حملے کرتے ہیں۔
اس ماہ کے شروع میں تختی خیل کے علاقے میں متحدہ مجلس عمل کی ایک ریلی پر حملے میں سات افراد زخمی ہوگئے تھے جن میں انتخابات میں حصہ لینے والے امیدوار بھی شامل تھے۔