ہندوستان

بہارکے پھنسے مزدورں کے لیے وزیراعلیٰ نے رقم جاری کی ،سہولت پہونچانے کی کوشش

پٹنہ26مارچ(بی این ایس )
وزیراعلیٰ نتیش کمار نے بہار میں کوروناوائرس کے بڑھتے کیس کو دیکھتے ہوئے بڑا فیصلہ لیاہے۔ جمعرات کوسی ایم نے وزیراعلیٰ راحت فنڈ سے 100 کروڑ روپے جاری کیے ہیں۔مریضوں کے علاج کے لیے اس فنڈکااستعمال ہوگا۔ بہار حکومت نے دوسری ریاستوں میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے پھنسے بہاریوں کی مددکے لیے حکام کی ٹیم بنائی ہے۔دیگرریاستوں میں تقریباََ 1500 بہاری پھنسے ہیں۔بتا دیں کہ اب دہلی میں تقریباََ 400، بنگال میں تقریباََ500، تمل ناڈو میں 250 پنجاب میں 400 دہاڑی مزدور اور دوسری جگہ پر کام کرنے والے لوگ پھنسے ہوئے ہیں۔تاہم انھیں بہار لاناابھی ممکن نہیں ہے۔ بہار حکومت نے اس کے لیے دونمبرز بھی جاری کیے ہیں،لوگ 81831252 اور 9773711261 پر فون کرکے مددمانگ سکتے ہیں۔بتا دیں کہ بہار میں اب تک متاثرین کی تعداد 6 ہو گئی ہے۔ ایک دن اس بیماری سے ایک نوجوان کی جان چلی گئی تھی۔اس سے پہلے بدھ کونائب وزیراعلیٰ سشیل کمار مودی نے اعلان کیاتھاکہ بی جے پی ممبران اسمبلی اوراراکین قانون سازایک ایک ماہ اور وزیر ایک ایک لاکھ روپے وزیراعلیٰ راحت فنڈمیں دیں گے۔تمام ممبران اسمبلی کو یہ ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ ان کے علاقے میں سبزی، پھل، دودھ سمیت ضروری چیزوں کی قلت نہ ہو۔ ممبران اسمبلی کو یہ ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ہر روزکم ازکم 100 لوگوں سے بات کریں اور ان سے رائے لیں۔ بہار حکومت نے وزیراعلیٰ راحت فنڈ میں 100 کروڑ کی رقم جاری کی ہے۔ اس رقم کا استعمال لاک ڈاؤن کی وجہ سے بہار کے اندر جو مزدور، رکشا والے، ڈرائیور، وینڈر اور دیگر غریب پھنسے ہوئے ہیں۔ ان کی بازیابی اور ریلیف مرکز بنانے اور ان کے لیے کھانے اوررہائش کابندوبست کرنے میں کیاجائے گا۔جو لوگ بہار کے باہر پھنسے ہوئے ہیں یا پھر راستے میں ہیں انہیں رہائش کمشنر کے ذریعے متعلقہ ریاستی حکومت اورمقامی انتظامیہ سے بات چیت کرکے وہیں پرکھانے اور رہائش کا بندوبست بہار حکومت کے خرچے پر کیا جا رہاہے۔اس کے علاوہ ڈیزاسٹر ریلیف مراکز پر صحت کی خدمات بھی دستیاب رہیں گی۔

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker