Baseerat Online News Portal

مہاراشٹر میں فیصلہ لینے کا اختیار ادھو ٹھاکرے ہی کو ہے، سنجے راوت نے راہل گاندھی کے بیان کی تائیدکی،اتحادہرطرح مضبوط

ممبئی 30مئی(بی این ایس )
شیوسیناکے لیڈر اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ سنجے راوت نے کہاہے کہ مہاراشٹرا میں فیصلہ ساز اختیار صرف وزیراعلیٰ ادھوٹھاکرے کے پاس ہے۔سنجے راوت نے کہاہے کہ تینوں پارٹیوں کا نظریہ مختلف ہے ، لیکن تینوں پارٹیاں مہاراشٹراکے لیے متحدہوکر کام کررہی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حزب اختلاف کو سر درد ہو رہا ہے۔ اپوزیشن تینوں جماعتوں کے مابین ہم آہنگی نہ ہونے کا غلط الزام لگا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی کے الفاظ درست ہیں۔ ان کا قائد بڑے فیصلے میں شامل نہیں ہے۔ اس طرح اتحاد کام کرتا ہے۔ چاہے وہ مرکز کا ہو یا مہاراشٹر کا۔ حتمی مرکزی فیصلہ وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے لیا ہے اوراب تک کسی کو بھی ان کے فیصلے میں کوئی پریشانی نہیں ہے۔شیوسینا کے لیڈر سنجے راوت نے کہاہے کہ ہم 30 سال سے بی جے پی کے ساتھ ہیں۔ یہ الزام ہے کہ ہماری وجہ سے اتحاد میں پھوٹ پڑا۔ تالی ایک ہاتھ سے نہیں بجتی ہے۔ ہم تمام برے وقتوں میں ان کے ساتھ رہے ہیں لیکن بی جے پی کو اقتدار کا لالچ ہے۔ وہ اقتدارکے لیے اپنے ہی دوست کی قربانی دینا چاہتا ہے۔ تو ہم اب ساتھ نہیں ہیں۔

You might also like