Baseerat Online News Portal

ایل جی کے حکم پر عمل کریں گے، اختلافات اور باہمی جھگڑوں کا وقت نہیں ہے: اروند کیجریوال

نئی دہلی :10؍ جون ( بی این ایس )
دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کہاکہ دہلی میں کل 31000 سامنے آئے ہیں، 12000 افراد ٹھیک ہوئے ہیں ۔ تقریبا900 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ سی ایم کیجریوال نے کہاکہ حکومت کی جانب سے پیش کردہ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ آنے والے وقت میں دہلی میں کورونا بہت تیزی سے پھیل جائے گا۔ 15 جون کو 44000لوگوں کے متاثر کی توقع ہے۔ 30 جون تک 100000 معاملات ہوں گے۔ 15 جولائی تک ڈھائی لاکھ اور 31 جولائی تک تقریباً532000 ہوں گے۔ اس کے پیش نظر 15 جون تک ہمیں 6681 بستروں کی ضرورت ہوگی۔ 31 جولائی تک 80000 بستروں کی ضرورت ہوگی۔ چیلنج بہت بڑا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اب ایک تحریک چلانی ہوگی۔ ماسک پہننا، کثرت سے ہاتھ دھونا اور سوشل ڈسٹنسنگ کرنی ہوگی۔ جو یہ کام نہیں کررہا ہے اس سے کہنا ہوگا کیونکہ جو قانون پر عمل نہیں کرتا ہے وہ دوسروں کو بھی پھیل سکتا ہے۔ جس طرح ہم نے آڈ ۔ایون میں ایک عوامی تحریک چلائی، اب ہمیں اسے کورونا میں کرنا ہے۔ وزیر اعلی نے کہاکہ دہلی کے کابینہ نے فیصلہ کیا تھا کہ کورونا کے دوران دہلی کے سرکاری اور نجی اسپتالوں میں صرف دہلی کے لوگوںکا ہی علاج کیا جائے۔ پیر کے روز ایل جی صاحب نے دہلی کے کابینہ کے فیصلے کو کالعدم کردیا۔ دہلی میں ایک منتخب حکومت ہے۔ ایل جی صحاب منتخب حکومت کے فیصلے کو پلٹ نہیں سکتے، کچھ لوگ ایسا کہہ رہے تھے۔ میں کہتا ہوں کہ مرکزی حکومت نے فیصلہ لے لیا ہے، ایل جی صاحب نے فیصلہ کرلیا ہے۔ سی ایم کیجریوال نے مزید کہاکہ یہ اختلافات کا وقت نہیں ہے۔ ایل جی صحاب نے جو حکم دے دیا اس کو نافذ کیا گیا ۔ مرکزی حکومت کے فیصلے پر عمل کیا جائے گا۔ اس پر کوئی لڑائی یا بحث نہیں ہے۔ میں تمام لوگوں اور پارٹی کے لوگوں کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ہم اس فیصلے پر عمل کریں گے۔ ایک بہت بڑا چیلنج ہے۔ 15 جولائی کو دہلی میں 33000 اور 31 جولائی کو 80000 بستروںکی ضرورت ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ جب کوئی کورونا نہیں تھا، تب 50فیصدباہر سے علاج کرواتے تھے، تو اس لحاظ سے دہلی کے بیڈوں کی تعداد اتنی ہی ہونی چاہئے جو دہلی کے باہر سے آتے ہیں۔ 31 جولائی کے حساب سے تقریبا 1.5 لاکھ بستروں کی ضرورت ہوگی۔ ہم پوری کوشش کریں گے جو ہماری ذمہ داری بھی ہے اور یہی خدمت کا کام ہے۔

You might also like