مسلم دنیا

انسانی اسمگلنگ کے انسدادمیں سعودی عرب کی پوزیشن بہتر

آن لائن نیوزڈیسک
سعودی عرب کی انسانی سمگلنگ کے انسداد کے لیے کوششیں کامیاب ہو رہی ہیں۔امریکی محکمہ خارجہ کی سالانہ رپورٹ میں سعودی عرب کی درجہ بندی کو اپ گریڈ کیا ہے۔سعودی ہیومن رائٹس کمیشن کے سربراہ ڈاکٹرعواد بن صالح العواد نے کہا ہے کہ’ سعودی عرب نے انسانی سمگلنگ کے انسداد میں مزید کامیابی حاصل کی ہے ۔ امریکی دفتر خارجہ نے رپورٹ جاری کرکے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ سعودی عرب انسانی سمگلنگ کے انسداد میں تیسرے درجے سے اب دوسرے درجے میں آگیا ہے‘۔
سبق ویب سائٹ کے مطابق ڈاکٹر العواد نے جو انسداد انسانی سمگلنگ کمیٹی کے سربراہ بھی ہیں کہا کہ ’انسانی سمگلنگ کے انسداد میں سعودی عرب کی پوزیشن بہتر ہونے کا بڑا سبب یہ ہے کہ مملکت نے اس حوالے سے اپنے یہاں اصلاحات نافذ کی ہیں۔ یہ کام شاہ سلمان اور ولی عہد کی قیادت میں کیا گیا ہے‘ـ۔
ڈاکٹر العواد نے بیان میں کہا کہ ’اصلاحات کے ذریعے انسانی سمگلنگ روکنے کے لیے بہترین قانونی ڈھانچہ تیار کیا گیا اور اس حوالے سے ادارہ جاتی ماحول ساز گار بنایاگیا‘ـ۔انہوں نے مزید کہا کہ’ سعودی عرب انسانی سمگلنگ کے انسداد کے لیے مسلسل کوشاں ہے۔ سعودی عرب میں اسلامی شریعت نافذ ہے اور اسلام نے انسانی وقار کے منافی ہر عمل کو گھناؤنا قرار دیے ہوئے ہے۔ اسلام انسانی حقوق کےتحفظ اور وقار کے احترام کی تاکید کرتا ہے‘۔
ہیومن رائٹس کمیشن کے سربراہ نے بتایا کہ سعوی عرب انسانی سمگلنگ کے انسداد کا قانون جاری کیے ہوئے ہے۔ یہ موثر قوانین و ضوابط پر مشتمل ہے جبکہ مملکت انسانی سمگلنگ کے انسداد کے معاہدوں اور پروٹوکولز پر بھی دستخط کیے ہوئے ہے‘۔
ڈاکٹرعواد بن صالح العواد کا کہنا تھا کہ ’مملکت میں انسداد انسانی سمگلنگ کی کمیٹی موثر شکل میں اپنا کردارادا کررہی ہے جبکہ وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود نے انسداد انسانی سمگلنگ کا ایک ادارہ قائم کررکھا ہے‘۔
’انسانی سمگلنگ کے جرائم سے تمام افراد کو تحفظ فراہم کردیا گیا ہے جبکہ متاثرین کی مدد اور انہیں معاوضہ دلانے کا طریقہ کار بھی متعین ہوچکا ہے‘۔

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker