ہندوستان

مرکزعلم ودانش علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی تعلیمی وثقافتی سرگرمیوں کی اہم خبریں

اے ایم یوای سی کی خصوصی میٹنگ۳۰؍جون کو
علی گڑھ، 29؍جون: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی ایکزیکیوٹیو کونسل کی ایک خصوصی میٹنگ ویڈیو کانفرنسنگ (ویب ایکس)کے توسط سے ۳۰؍جون۲۰۲۰ء کو ۱۱ بجے صبح منعقد ہوگی جس میں۲۱-۲۰۲۰ کے لئے اے ایم یو، وزارت برائے فروغ انسانی وسائل اور یونیورسٹی گرانٹس کمیشن کے مابین میمو رنڈم آف انڈراسٹینڈنگ پر غورو خوض کیا جائے گا۔
اے ایم یو رجسٹرار مسٹر عبد الحمید، آئی پی ایس نے سبھی ای سی ممبران سے میٹنگ میں شامل ہونے کی اپیل کی ہے۔
٭٭٭٭٭٭
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج میں کینسر کے علاج کی نئی مشین نصب
علی گڑھ، 29؍جون: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج کے ریڈیو تھیراپی شعبہ میں مختلف قسم کے کینسر اور ٹیومر کے علاج کے لئے نئی مشین سیجی نووا ایچ ڈی آر بریکائی تھیراپی مشین کی تنصیب عمل میں آئی ہے۔
وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے کہا کہ اس جدید ترین مشین کی تنصیب سے جے این میڈیکل کالج میں کینسر کے علاج و معالجے کے نظام کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی اور مریضوں کے علاج میں بہتری لائی جا سکے گی۔ انہوں نے کہا کہ جے این میڈیکل کالج میں طبی خدمات کو مسلسل بہتر بنایا جا رہا ہے اور مریضوں کو آسانیاں فراہم کی جا رہی ہیں۔
میڈیکل کالج کے پرنسپل اور سی ایم ایس پروفیسر شاہد علی صدیقی نے بتایا کہ اس مشین کی تنصیب پرانی مائکرو ایچ ڈی آر مشین کی جگہ کی گئی ہے جس کا استعمال ۲۰۰۵سے کیا جا رہا تھا۔انہوں نے کہا کہ اس مشین میں ریڈئیشن سے حفاظت کا خود کار نظام موجود ہے جس سے مریضوں اور طبی خدمات سے متعلق افراد کو مکمل تحفظ حاصل ہوگا۔ انہوںنے کہا کہ یہ مشین سروائیکل، پروسٹیٹ، بریسٹ، ایسوفیگل اور جِلد کے کینسر کے علاج میں نہایت کارگر ثابت ہوگی۔
میڈیکل سپرنٹنڈنٹ پروفیسر حارث منظور خان نے کہا کہ جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج میں مریضوں کی ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ہدایات کے مطابق جانچ کی جاتی ہے تاکہ انہیں ریڈئیشن سے کوئی خطرہ نہ ہو۔
واضح ہو کہ کووِڈ۹ٍ۱ وبا کے پیش نظر ریڈیو تھیراپی شعبہ میں کینسر کے مریضوں کو طبی مشورہ فراہم کرنے کے لئے تالا بندی کے دوران ٹیلی میڈیسن کے ذریعہ خدمات فراہم کی گئیں اور گزشتہ ۱۲؍مئی سے او پی ڈی خدمات بھی فراہم کی جا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ ۲۹؍ مئی سے ریڈیو تھیراپی خدمات بھی بحال کر دی گئی ہیں۔

٭٭٭٭٭٭
پروفیسر صمدانی کی ویبینار میں شرکت
علی گڑھ، 29؍جون: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی قانون فیکلٹی کے ڈین پروفیسر ایم شکیل صمدانی نے شاہجہاں پور کے آریہ مہیلا ڈگری کالج میں ’’اِمپیکٹ آف آن لائن ایجوکیشن‘‘ موضوع پر منعقدہ انٹرنیشنل ویبینار میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا کے دوران آن لائن تدریس کی اہمیت کافی بڑھ گئی ہے اور اس مشکل وقت میں حکومت، یونیورسٹی، کالج اور دیگر ادارے اپنی جانب سے طلبہ کو آن لائن ذریعہ سے تعلیم فراہم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
انہوںنے کہا کہ اس مشکل وقت میں سماجی دوری کا خیال رکھتے ہوئے تعلیم حاصل کرنے کا اس سے بہتر کوئی اور راستہ نہیں ہے۔ حالانکہ اس کے بھی مثبت اور منفی ، دونوں پہلو ہیں۔ اس سے جسمانی محنت میں کمی، وقت کی بچت، ماحولیات کا تحفظ، معاشی بچت وغیرہ کا ہدف پایا جا سکتا ہے لیکن طلبہ کی شخصیت کا مکمل فروغ کلاس روم میں پڑھائی کے ذریعہ ہی ممکن ہو سکتا ہے۔انہوںنے کہا کہ آن لائن تعلیم صرف طلبہ پر ہی نہیں بلکہ ان کے ولدین پر بھی اثر ڈال رہی ہے کیونکہ ملک میں ابھی آن لائن تعلیم کا مکمل نظام موجود نہیں ہے کہ اس پر پوری طرح انحصار کیا جا سکے۔
٭٭٭٭٭٭
ویبینار کا انعقاد
علی گڑھ، 29؍جون: علی گڑھ میڈیکل ایسو سی ایشن، یو کے اور اے ایم یو المنائی ایسوسی ایشن ، جزان ، سعودی عرب کے مشترکہ تعاون سے کورونا وبا پر ایک ویبینار کا انعقاد کیا گیا جس کو خطاب کرتے ہوئے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج میں کووڈ ۱۹ کے سلسلے میںفراہم کی جانے والی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہاں اعلیٰ معیاری علاج اور دیکھ بھال فراہم کی جا رہی ہے اور میڈیکل کالج صوبائی سطح پر کووڈ ۱۹ کی جانچ اور علاج کا اہم مرکز ہے۔
اس میٹنگ کا انعقاد علی گڑھ میڈیکل ایسو سی ایشن، یو کے کے صدر ڈاکٹر خالد رضوی اور اے ایم یو المنائی ایسوسی ایشن ، جزان کے ممبر سکریٹری ڈاکٹرسید کاشف علی کی مشترکہ کوششوں سے عمل میں آیا۔ میٹنگ میں یو کے کے ڈاکٹر حبیب احمد، جے این ایم سی کے پروفیسر محمد شمیم، ریاض کے ڈاکٹر فاروق احمد اور جزان کے ڈاکٹر اطہر احمد نے بھی خطاب کیا۔ میٹنگ کے بعد تبادلہ خیال کا انعقاد بھی عمل میں آیا۔

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker