Baseerat Online News Portal

عدالت نے غداری کے معاملے میں صحافی ونود دوا کوراحت، تحفظ کی مدت 15 جولائی تک بڑھائی

نئی دہلی، 7 جولائی (بی این ایس )
سپریم کورٹ نے صحافی ونود دوا کے یوٹیوب پروگرام کولے کر ہماچل پردیش میں درج غداری کیس میں ان کے خلاف کسی بھی قسم کی مجرمانہ کاروائی سے تحفظ کی مدت منگل کو 15 جولائی تک کیلئے بڑھادی ہے۔دوا کے خلاف ان کے پروگرام کولے کر بی جے پی کے ایک مقامی لیڈر نے شکایت درج کرائی ہے۔جسٹس جسٹس ادے یو للت کی سربراہی والی بنچ نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے اس معاملے کی سماعت کی اور ہماچل پردیش کی پولیس کو اس معاملے میں ونود دوا کو گرفتار کرنے سے روک دیا۔بنچ اگلے بدھ کو اس معاملے پر سماعت کرے گی۔ بنچ نے یہ بھی کہا کہ دوا کو اس معاملے میں اضافی سوالات کے جوابات دینے کی ضرورت نہیں ہے۔ دوا اس مقدمے میں ڈیجیٹل تحقیقات کے ذریعہ شامل ہوئے تھے۔بی جے پی کے مقامی لیڈر شیام کی شکایت پر6 مئی کو شملہ کے کمارسین پولیس اسٹیشن میں ونود دوا کے خلاف ملک سے غداری، توہین آمیز مواد کی اشاعت اور عوامی فساد برپا کرنے کا الزامات میں تعزیرات ہندکی دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی تھی۔ شیام کا الزام ہے کہ ونود دوا نے اپنے پروگرام میں وزیر اعظم پر ووٹ حاصل کرنے کے لئے موت اور دہشت گردانہ حملوں کے استعمال کرنے کا الزام لگایاتھا۔

You might also like