Baseerat Online News Portal

اچھے دنوں کے اچھے تحفے ،نجی کمپنیاں کمائیں گی سونا ،جے پور سمیت 4 شہروں سے 9 مقامات کے درمیان چلیں گی نجی ٹرینیں

جے پور،۹؍جولائی( بی این ایس )
وزارت ریلوے نے حال ہی میں ملک بھر میں مختلف روٹ پر 224 نجی ٹرینوں کے چلانے کی منظوری دی ہے۔ اس میں ، ٹرینوں کو ریاست کے لحاظ سے تقسیم کیا گیا ہے۔ جس کو کلسٹر کے نام سے جانا جاتا ہے ۔ راجستھان کلسٹر میں 10 جوڑی ٹرین چلانے کے لئے ایک تجویز تیار کی گئی ہے۔ ان میں ریاست کے چار شہروں سے 9 شہروں کے درمیان ٹرینیں چلائی جائیں گی۔ جس میں جے پور سے ممبئی ، دہلی ، جیسلمیر اور وشنو دیوی تک نجی ٹرینیں چلانے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ نیز اجمیر ، کوٹا اور جودھ پور سے بھی ٹرینیں چلائی جائیں گی۔ اب نجی کمپنیوں کو ان راستوں پر ٹرینیں چلانے کی’ ریکویسٹ فار کوٹ‘جاری کردی گئی ہے۔ راجستھان کلسٹر میں ٹرین چلانے والی نجی کمپنی کو ریلوے کو تقریبا 23 2300 کروڑ روپئے ادا کرنے ہوں گے۔ اس کے بعد وہ اپنا منافع کما سکیں گے۔نجی کمپنیوں کو منافع کمانے کے لئے ریلوے نے انہیں کرایہ طے کرنے سے لے کر اسٹاپیج تک کا اختیار دیا ہے۔ یعنی نجی کمپنی کرایہ کا فیصلہ کرے گی۔ نیز کتنے دن ٹرین کس اسٹیشن پر رکے گی اس کا تعین بھی خود کمپنی کرے گی۔ ریلوے کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ نجی ٹرینوں کے کرایے ہوائی کرایوں سے کم ہوں گے ، لیکن عام ٹرینوں کے مقابلے میں اس کی قیمت 20 فیصد زیادہ ہوگی۔ حتمی فیصلہ خود کمپنی کا ہی ہوگا۔ کمپنی نان رینیو ٹکٹنگ پر زیادہ توجہ دے گی۔ ایسی صورتحال میں ، وہ ہائجنک کیٹرنگ سروس ، آن ڈیمانڈ فوڈ جیسی اشیاء کے لئے چارج کرے گی۔ اس کے ساتھ ٹرین کے اندر سیٹ الاٹمنٹ کیلئے بھی اضافی چارج کئے جائیں گے۔ جس میں لوئر اور سائڈ لوئر برتھ کے کرایہ پر لگ بھگ 200 روپے کے علاوہ چارج کیا جائے گا۔ یعنی نہ تو ان ٹرینوں میں کوئی رعایت ملے گی اور نہ ہی کرایے میں کوئی سبسڈی دی جائے گی۔

You might also like