Baseerat Online News Portal

وکاس دوبے انکاؤنٹر: معاملہ کی تفتیش کیلئے ریٹائرڈجج نامزد ، متعلقہ انکاؤنٹرس کی ہوگی تفتیش

لکھنؤ،12؍جولائی( بی این ایس )
ایس او ایف سمیت آٹھ پولیس اہلکاروں کے قاتل گینگسٹر وکاس دوبے کو ۱۰؍ جولائی کوپولیس انکاؤنٹر میں مار گرایا گیا ۔ لیکن اس سے یوگی حکومت پر پولیس کے کام کاج اور انکاؤنٹر کے طریقۂ کار پر سوالات اٹھ رہے ہیں۔ اس صورتحال میں حکومت نے ایک ریٹائرڈ جج کا کمیشن بنا کر تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے۔ ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جج ششکانت اگروال کو تفتیش کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ اس سے قبل ایس آئی ٹی ، ای ڈی اور کانپور انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ بھی کانپور انکاؤنٹر کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ریاستی حکومت کے ترجمان نے بتایا کہ کمیشن کا صدر دفتر کانپور میں ہوگا۔ یہ کمیشن 2 جولائی کو بکروٗ گاؤں میں ہونے والے حادثہ کے علاوہ پولیس اور اس کیس سے متعلق مجرموں کے مابین ہر ایک انکاؤنٹر کی بھی تحقیقات کرے گا۔ یہ کمیشن وکاس دوبے اور اس کے ساتھیوں کو پولیس اور دیگر محکموں کے افراد کے ساتھ ساز باز کے متعلق بھی تفتیش کرے گا ۔اس کے علاوہ یہ کمیشن ، دوبارہ اس طرح کے واقعات پیش نہ آئے ، اس کے متعلق بھی اپنی تجاویز دے گا۔ خیال رہے کہ بکروٗ شاٹ آؤٹ میں تین دن میں چاراور آٹھ دن میں چھ انکاؤنٹر ہوئے ۔ 10 جولائی کی صبح کانپور سے 17 کلومیٹر پہلے بھو نتی نامی مقام پر میںوکاس دوبے کا انکاؤنٹر کیا گیا تھا۔ اس سے قبل 9 جولائی کو اس کے قریبی پربھات جھا کا کانپور میں انکاؤنٹر ہوا تھا اور بواّ دوبے کا اٹاوہ میں انکاؤنٹرہوا تھا۔ 8 جولائی کو وکاس کا رائٹ ہینڈ اور شارپ شوٹر امر دوبے ہیمر پور میں مارا گیا تھا۔ ان چار انکاؤنٹر میں تقریبا ًایک جیسی تھیوری سامنے آئی تھی کہ وہ پولیس پر حملہ کرکے فرار ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔ اس سے قبل وکاس کے ماموں پریم پرکاش پانڈے اور ان کے ساتھی اتول دوبے کا انکاؤنٹر 3 جولائی کو ہی ہوا تھا۔

You might also like