Baseerat Online News Portal

کیوٹی میں سیلاب متاثرہ جوڑے کو پک اپ وین نے کچلا ،دونوں کی موت ،گاڑی ضبط ،ڈرائیور گرفتار

کیوٹی میں سیلاب متاثرہ جوڑے کو پک اپ وان نے کچلا ،دونوں کی موت
،گاڑی ضبط ،ڈرائیور گرفتار

جالے۔

رفیع ساگر (بی این ایس)

دربھنگہ-جئے نگر قومی شاہراہ 527 بی کے کوئلہ استھان – چترا کے درمیان منگل کی صبح پک اپ وان کی ٹھوکر سے سڑک کنارے سو رہے سیلاب متاثرہ زوجین کی موت ہوگئی ہے۔یہ واقعہ 3 بجے صبح کا بتایا گیا ہے۔ مہلوکین زوجین کی شناخت کوئلہ استھان گاوں کے ہی سریندر یادو و اسکی اہلیہ پرم شیلا دیوی کی شکل میں ہوئی ہے۔جیسے ہی حادثہ کی خبر عام ہوئی علاقے میں کہرام مچ گیا۔ ادھر حادثہ کے بعدمشتعل لوگوں نے دربھنگہ- جئے نگر قومی شاہراہ کو تقریباً 4 گھنٹے تک کیلئے جام کردیا جس وجہ کر آمدو رفت متاثر رہی اور سڑک کے دونوں طرف گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی رہی۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی بی ڈی او محمد مہتاب انصاری ، سرکل آفیسر اجیت کمار جھا اور کیوٹی تھانہ صدر شیو کمار یادو پولیس فورسیز کے ساتھ جائے وقوع پر پہونچ کر حالات کا جائزہ لیا ساتھ ہی ضلع پریشد نمائندہ سو ونش یادو ، مکھیا نمائندہ سشیل ساہ ، سرپنچ نمائندہ کامود نارائن ساہ ، پنچایت سمیتی رکن بھولا کمار ، راجد ہینڈیکیپ سیل کے ضلع صدر مہنیدر یادو سمیت مقامی سرکردہ شخصیات کی مدد سے وہاں موجود لوگوں سے بات چیت کے بعد جام کو ختم کروایا گیا۔ دریں اثناء کئی تھانوں کی پولیس بھی موقع پر پہونچی جہاں پولیس حادثہ کا شکار ہوئے بغیر نمبر پلیٹ کی بولیرو پک اپ وین کو ضبط کر لیا ہے۔ وہیں پکڑے گئے پک اپ وین ڈرائیور مدھوبنی ضلع کے ہرلاکھی تھانہ کے تحت نہرنیا گاوں باشندہ تیج نارائن منڈل کا لڑکا دیپک کمار منڈل کو پولیس کے حوالے کر دیا۔ غورطلب کو سیلاب کا پانی گھر میں داخل ہونے کے وجہ سے متوفی سریندر یادو سڑک کنارے دو الگ الگ جگہوں پر پلاسٹک ڈال کر ڈیرہ ڈالے ہوئے تھے اسی دوران کیوٹی کے طرف سے تیز رفتار میں آرہی پک اپ وین نے ڈیرہ میں ٹھوکر مارتے ہوئے پلٹ گئی جس میں سریندر و اسکی اہلیہ شدید طور پر زخمی ہوگئے۔ مقامی لوگوں نے پہل کر دونوں زخمیوں کو علاج کیلئے ڈی ایم سی ایچ میں داخل کروایا جہاں ڈاکٹروں نے پرم شیلا کو مردہ قرار دیا جبکہ سریندر کی موت علاج کے دوران ہوگئی۔ متوفی کے بارے میں بتایا گیا ہیکہ وہ ایک ڈرائیور تھا اس کے پاس ماں کے علاوہ 2 لڑکے اور 2 لڑکیاں ہیں جس میں ایک لڑکی کی شادی ہوچکی ہے۔ ادھر بی ڈی او محمد مہتاب انصاری نے خاندانی فلاح اسکیم کے تحت 20-20 ہزار اور سرکل آفیسر و ڈیزاسٹر کے نوڈل آفیسر اجیت کمار جھا نے ڈیزاسٹر مینیجمینٹ اسکیم سے 4-4 لاکھ روپے کا چیک متوفی سریندر کی والدہ اور متوفیہ پرمشیلا کی ساس مرنی دیوی کو سونپا۔ اس کے تعلق سے مرنی دیوی کی درخواست پر ایف آئی آر بھی درج کرلی گئی ہے ۔ادھر حادثہ کے بعد والدہ مرنی دیوی ، لڑکا ببلو اور پربھو ، لڑکی رادھا کماری کا رو رو کر برا حال ہے کیونکہ اچانک اس فیملی پر مصیبتوں کا جیسے پہاڑ ٹوٹ پڑا ہو۔

You might also like