Baseerat Online News Portal

دربھنگہ میں 4 اگست سے شروع ہونے والا بھیکھا شاہ سیلانی کا سالانہ عرس ملتوی ، خادم درگاہ شاہ محمد شمیم نے کہا کورونا کی بڑھتی وبا کے مدنظر لیا گیا فیصلہ ، عرس کی رسومات کی ادائیگی سوشل ڈسٹینسگ کے ساتھ خاندانی رکن ہی انجام دیں گے۔

دربھنگہ میں 4 اگست سے شروع ہونے والا بھیکھا شاہ سیلانی کا سالانہ عرس ملتوی ، خادم درگاہ شاہ محمد شمیم نے کہا کورونا کی بڑھتی وبا کے مدنظر لیا گیا فیصلہ ، عرس کی رسومات کی ادائیگی سوشل ڈسٹینسگ کے ساتھ خاندانی رکن ہی انجام دیں گے۔

 

دربھنگہ ۔ محمد رفیع ساگر / شہر کی مشہور درگاہ حضرت بھیکھا شاہ سیلانی کے مزار پر سالانہ عرس کے موقع پر لگنے والے میلے کو اس سال کورونا وائرس کے وجہ سے ملتوی کر دیا گیا ہے۔ معلوم ہو کہ یہاں 5 روزہ عرس میں ہر سال متھلانچل و قرب و جوار کے ہزاروں کی تعداد میں مرد عورتیں شامل ہوتے ہیں کیونکہ سلسلہ مداریہ کے صوفی سنت حضرت مخدوم شاہ سیلانی کو ہندو مسلم یکساں طور پر مانتے ہیں اور عرس میں بھی شامل ہوتے ہیں اس لئے عرس کو فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے طور پر منایا جاتاہے۔ غورطلب ہو کہ عالمگیر وبا کورونا کو لیکر ریاستی سطح پر جاری لاک ڈاؤن اور وزارت داخلہ کی ہدایت میں اس سال حضرت مخدوم بھیکھا شاہ سیلانی رحمۃ اللہ کے 371 ویں عرس میں عام عقیدتمندوں کو شامل ہونے پر پابندی رہے گی۔ درگاہ کے خادم شاہ محمد شمیم کےمطابق 5 روزہ عرس کا انعقاد 4 سے 8 اگست تک ہونا تھالیکن حکومتی گائڈ لائن کے مطابق مذہبی پروگرام کے انعقاد کرنے پر پابندی ہے اس لئے اس موقع پر نہ تو کسی طرح کا پروگرام ہوگا اور نہ ہی کسی بھی شخص کی تشریف آوری ہوگی۔ وہیں شاہ محمد شمیم نے بتایا کہ عرس کی مذہبی رسومات کو صرف خاندانی ممبروں کے ذریعہ سوشل ڈسٹینسنگ کے ساتھ ادا کیا جائے گا۔ انہوں نے عام لوگوں سے اپیل کیا کہ اس مرتبہ کورونا کو لیکر درگاہ پر نہ آئیں اور سرکاری گائڈ لائن پر عمل کریں۔۔

You might also like