Baseerat Online News Portal

عوامی مسئلے پر زمینی سطح پر کام کی ضرورت، موجودہ حکومت میں ترقیاتی کام کے بدلے سبزباغ زیادہ دکھائے گئے،  بھارتیہ مومن فرنٹ کے امیدوار نظیر احمد انصاری کا لتراہا میں پریس سے خطاب،

عوامی مسئلے پر زمینی سطح پر کام کی ضرورت، موجودہ حکومت میں ترقیاتی کام کے بدلے سبزباغ زیادہ دکھائے گئے،

بھارتیہ مومن فرنٹ کے امیدوار نظیر احمد انصاری کا لتراہا میں پریس سے خطاب،

 

رفیع ساگر /بی این ایس

جالے۔ مقامی اسمبلی حلقہ کے لتراہا گاوں میں بھارتیہ مومن فرنٹ کے امیدوار و پارٹی کے چیف جنرل سکریٹری نظیر احمد انصاری نے اسمبلی انتخابات کی تیاری شروع کردی ہے۔بدھ کو توقیراحمد منا کی صدارت میں منعقدہ پریس کانفرنس میں مسٹر نظیر انصاری نے کہا کہ وہ زمینی سطح کی سیاست کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان کی اہلیہ پنچایت سمیتی رکن رہی ہے اور وہ خود بھی ضلع پریشد کی نمائندگی کرچکے ہیں۔اس دوران انہوں نے عوامی مفاد میں جو کام کئے وہ کسی سے پوشیدہ نہیں ہے۔ایم ایس ڈی

پی منصوبہ سے پسماندہ علاقے جہانگیر ٹولہ میں اسکول کی عمارت تعمیرکروا کر وہاں ہائی اسکول تک کی تعلیم کے راہ ہموار کئے۔انہوں نے موجودہ ایم ایل اے پر وارکرتے ہوئے کہا کہ انتخابی سال میں وہ صرف سنگ بنیاد اور افتتاحی کاموں کا سبزباغ دکھا رہے ہیں جسے عوام سمجھ چکی ہے۔انہوں نے کہا کہ ترقیاتی معاملوں میں جالے کے ساتھ سوتیلا سلوک کیا گیا ہے۔نظیر احمد انصاری نے کہا کہ اپنے گھر لتراہا سے سیاست شروع کیا ہوں، دبے کچلے لوگوں کی ترقی نہیں ہوئی ہے، انہیں رہنے کے لئے نہ زمین ہے اور نہ ہی رہائش ۔ایسے طبقے کی زندگی میں خوشحالی لانا ان کی مشن میں شامل ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتیہ مومن فرنٹ 100 سیٹوں پر اپنا امیدوار اتارے گی۔35 امیدواروں کی پہلی فہرسٹ جاری کی جاچکی ہے جس میں دربھنگہ کو 2 سیٹ ملی ہے۔جالے سے جالے کے بیٹے نظیر احمد انصاری کو جبکہ حیاگھاٹ سے دربھنگہ وارڈ 38 دمدمہ رہائشی ارشاد حسین کو امیدوار بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میری پارٹی 50 فیصد خواتین کو ٹکٹ دے گی۔بے داغ لوگ پارٹی کے امیدوار ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ زمینی سطح پر کام کو انجام دیکر وہ گاوں کی ضرورتوں کو پورا کریں گے۔انہوں نے وزیر اعلی نتیش کمار پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ جب روزگار کے مواقع پیدا نہیں کرسکے تو اب یہ کہ رہے ہیں کہ دلت کا قتل ہونے پر ان کے کنبوں کو سرکاری ملازمت دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اس سے سماج میں غیراطمینانی کیفیت پیدا ہوگی اور سماج کا تانا بانا بکھر جائے گا۔انہوں نے نتیش کمار کے اس اعلان کو قتل کو فروغ دینے والا اسٹینڈ قرار دیا۔

مسٹر نظیر انصاری نے کہا کہ اگر یہاں کی عوام انہیں ایم ایل اے منتخب کرتی ہے تو وہ زمینی مدعے کو ایوان تک اٹھائیں گے۔انہوں نے بہار میں بجلی کی شرح کو کمرتوڑنے والا بتاتے ہوئے کہا کہ دیگر ریاستوں کی طرز پر وہ بجلی کی شرح نافذکرنے کے لئے پالیسی مرتب کروائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اہم مقاصد میں تعلیم نظام کو مستحکم بنانا، انسداد بیروزگاری کے لئے سہ سطحی پنچایتی نمائندوں کی مدد سے پنچایتوں میں سروے کروا کر ڈاٹا تیار کروائیں گے اور اس کو وہیں خودمختاری کی تربیت دلوا کر روزگار کے مواقع پیدا کریں گے۔انہوں نے کہا کہ بے زمینوں کو 4 ڈسمل زمین مہیا کروانے کی سمیت میں بھی وہ پہل کریں گے۔تعلیم ،صحت ،سڑک ،پانی ،روزگار کے وسائل کو فروغ دینے کے لئے وہ اپنے عزم پر قائم ہیں۔اس موقع پر یوتھ سوشل ورکر توقیر احمد منا نے کہا کہ موجودہ دور میں سب سے زیادہ پسماندہ اور پچھڑا طبقہ لاک ڈاون کےسبب بیروزگاری کی مار جھیل رہاہے۔لیکن اقتدار پر قابض لوگوں کے پاس اتنا وقت بھی نہیں ہے کہ اس کی خیریت معلوم کرسکے۔جب بھی انتخابات قریب آتا ہے تو برسراقتدار پارٹی ایئرپورٹ پر راگ الاپنا شروع کردیتی ہے اور عوامی مدعے پر پردہ ڈال دیتی ہے۔موقع پر حیاگھاٹ کے امیدوار ارشاد حسین،محمد پیارے ،کنہیا مہتو، مصطفی انصاری، شیوجی مہتو، محمد مظاہر حسین، محمد فیروز، ارشد حسین،گنیشی پنڈت اور راجو سہنی سمیت کئی کارکنان شامل تھے۔

You might also like