Baseerat Online News Portal

دودرجن نشستوں کے لیے ایل جے پی،جے ڈی یومیں کشیدگی

نئی دہلی16ستمبر(بی این ایس )
بہارانتخابات سے قبل لوک جن شکتی پارٹی کے صدر چراغ پاسوان مختلف انداز میں نظر آ رہے ہیں۔ کبھی وہ نتیش کمار پر نرم ہیں اور کبھی وہ گرم رویہ اختیار کر رہے ہیں۔ دراصل وہ بلیک میلنگ کی سیاست کررہے ہیں اورزیادہ سیٹوں کے لیے دبائوبنارہے ہیں۔چراغ پاسوان نے پھرپارٹی کی میٹنگ طے کی ہے۔ایساسمجھاجارہاہے کہ وہ143سیٹوں پرلڑنے کااعلان کرسکتے ہیں۔ریاست میں دودرجن کے قریب اسمبلی نشستیں ہیں جن پردونوں جماعتوں کے مابین تنازعہ ہے۔ اگر آپ اعدادوشمار پر نگاہ ڈالیں توجے ڈی یونے یہ سیٹیں2015 کے اسمبلی انتخابات میں جیتی تھیں جب کہ چراغ پاسوان کی پارٹی دوسرے نمبرپرتھی۔ پچھلے اسمبلی انتخابات میں منظرنامہ الگ تھا۔ نتیش کمارنے لالویادو اورکانگریس کے ساتھ مل کرالیکشن لڑاجب کہ ایل جے پی ، ہم اور آر ایل ایس پی نے بی جے پی کے ساتھ مل کرمقابلہ کیاہے۔ ایل جے پی نے کل 42 نشستوں کے لیے امیدوار کھڑے کیے تھے۔ ان میں سے صرف دوجیتی تھی۔ باقی 40 نشستوں پراسے شکست کا مزہ چکھنا پڑا۔ کھوئی ہوئی نشستوں میں سے 50فی صد میں ، اس نے جے ڈی یوسے مقابلہ کیاہے۔ ان میں ایل جے پی دو نمبر کی پارٹی تھی جب کہ ایل جے پی نے جے ڈی یو کے امیدوار کو صرف ایک سیٹ (لال گنج) میں شکست دی تھی۔

You might also like