Baseerat Online News Portal

جھارکھنڈ: سی پی آئی (ایم) اور آر جے ڈی نے کیا زراعت بل کی مخالفت ،کسان اپنی پیداوار چھوٹی کمپنیوں کو بیچنے پر مجبور ہوجائیں گے

رانچی، 25 ستمبر ( بی این ایس)
جمعہ کے روز جھارکھنڈ آر جے ڈی اور سی پی آئی (ایم) نے مرکزی حکومت کے زرعی بل کے خلاف احتجاج اور دھرنا دیا۔ دارالحکومت کے البرٹ میں سی پی آئی – ایم ایل کے رہنماؤں نے کہا کہ اس بل سے کسانوں کوجبری قیمتوں پر اپنی پیداوار بڑی کمپنیوں کو فروخت کرنے پر مجبور کیا جائے گا۔ جب ملک کا کسان مجبور ہوگا ، تب پورا ملک بھوک و افلاس کا شکار ہوگا۔ اسی دوران آر جے ڈی رہنماؤں نے کہا کہ مرکزی حکومت کے کالے قانون کے خلاف پورے ملک کی حزب اختلاف کی جماعتیں ایک ہیں ،اگر کسانوں کے مفادات کی خلاف ورزی ہوئی تو سڑکوں پر خون بہہ پڑے گا۔ سی پی آئی (ایم) کے رہنما بھوونیشور نے کہا کہ مرکزی حکومت نے جو زرعی بل لایا ہے ، وہ کسانوں کے مفادات سے زیادہ کارپوریٹ ہاؤسز کے مفادات کا خیال رکھ کر وضع کیا گیا ہے ۔ بل کے نفاذ کے ساتھ ہی کاشتکاری کا حق چھین لیا جائے گا۔ حکمران جماعت کے مرکزی وزیر زراعت اور مرکزی حکومت جو اس دلیل پرقائم ہیں کہ اس بل سے کسانوں کو فائدہ ہوگا، ہم کہتے ہیں کہ یہ بل کسانوں کو خودکشی پر مجبور کرے گا۔ بڑی کمپنیاں اپنی پیداوار کو ایک چوتھائی سے ایک قیمت پر فروخت کرنے پر مجبور ہوں گی۔ جب ملک کا کسان مجبور ہو گا ،اس وقت پورا ملک فاقہ کشی کے جال میں پھنسا ہوا ملے گا۔

You might also like