Baseerat Online News Portal

رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ دارالعلوم دیوبند صوبہ دہلی کی اہم میٹنگ کاانعقاد

نئی دہلی:۲۵؍ستمبر(پریس ریلیز)
رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ دارالعلوم دیوبند صوبہ دہلی کی ایک اہم میٹنگ صوبائی دفتر مدرسہ باب العلوم جعفرآباد دہلی میں ہوئی جس کی صدارت مولانا محمد داؤد امینی صدر رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ دارالعلوم دیوبند صوبہ دہلی نے کی جبکہ نظامت مولانا محمد جاوید صدیقی قاسمی نے کی۔مہمان خصوصی کی حیثیت سے مفتی ذکاوت قاسمی شیخ الحدیث مدرسہ امینیہ کشمیری گیٹ دہلی،مولانا محمد غیور قاسمی،قاری عبد السمیع شاہی موجود رہے۔باضابطہ مجلس تعلیمی و عمومی رابطہ مدارس دہلی کا آغاز قاری محمد سہراب کی تلاوت قرآن مجید و نعت پاک سے ہوا۔میٹنگ میں مدارس اسلامیہ کو مالی بحران سے نکالنے پر غور و خوض،مدارس میں تعلیمی سلسلے و نظام کو شروع کرنے و بحال کرنے کے لئے افسران سے ملاقات، طلبہ مدارس کے لئے آن لائن تعلیمی افادیت یا مضر اثرات پر مذاکرہ،دہلی کے مدارس کو رابطہ سے از سر نو مربوط کرنے پر غور، بیرونی چندے و آمد کی حصولیابی کے لئے قانونی پابندیوں و حکومتی گائڈ لائن کے مطابق مستقبل کے لئے لائحہ عمل طے کرنا جیسے ایجنڈوں پر غور خوض کیا گیا۔مزید اس موقع پر کئی اہم شعبوں و پہلوؤں کو ملحوظ رکھ کر ضروری سمجھتے ہوئے چند کمیٹیاں تشکیل دی گئیں تاکہ مستقبل کے بدلتے حالات و تقاضے کے مطابق رابطہ کو فعال و متحرک بنانے کے ساتھ مدارس و اہل مدارس کے لئے بر وقت بر موقع خدمات پیش کر سکیں۔سرپرست مولانا محمد داؤد امینی جبکہ کنوینر قاری شاہد بدری صدر شمالی دہلی بنائے گئے۔مدارس سے متعلق کسی طرح کے در پیش مسائل کے حل کے لئے گورمنٹ و سرکاری افسران سے ضروری ملاقات کے لئے کمیٹی بنائی گئی جس کے کنوینر مولانا محمد جاوید صدیقی قاسمی ہوں گے۔دہلی مدارس کو رابطہ مدارس عربیہ دارالعلوم دیوبند سے از سر نو مربوط کرانے کی قائدانہ ذمہ داری و سرپرستی مفتی محمد ذکاوت قاسمی شیخ الحدیث مدرسہ امینیہ کے سپرد کی گئی۔وہیں دہلی رابطہ مدارس کو فنڈ کے اعتبار سے مضبوط کرنے و سالانہ طے شدہ رابطہ کی آمدنی کی وصولیابی کی نگرانی و سرپرستی قاری محمد ارشاد کے حوالے کی گئی۔مولانا محمد داؤد امینی صدر رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ صوبہ دہلی نے خطبہ صدارت پیش کرتے ہوئے مفتی ابو القاسم نعمانی مہتمم دارالعلوم دیوبند و صدر کل ہند رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ دارالعلوم دیوبند کے ذریعہ جاری کردہ مدرسے کے مہتمم کے نام خط پڑھ کر بتاتے ہوئے کہافی الحال مدارس اسکول کالج بند ہیںایسے موقع پر اہل مدارس خصوصی طور پر اپنے اسٹاف و اساتذہ کا ضرور خیال رکھیں انکی ضروریات کی تکمیل ممکن با سہولت جہاں تک ہو ضرور کریں۔مولانا مفتی ذکاوت قاسمی نے کہا کہ حالیہ جاری کردہ گورمنٹ کے ذریعہ ۲۰۲۰ کے تعلیمی نظام کو سمجھیں اپنی تاریخ و تہذیب مسخ نہ ہوجائے اس پر گہری نظر ہونی چاہئے ۔مولانا محمد غیور احمد قاسمی نے کہا کہ مدارس کے ذمہ داران کو حوصلے کے ساتھ حالات کا مقابلہ کریں اور سلسلہ تعلیم کو منظم کرنے کے ضوابط اور خاکہ ابھی سے تیار کریں وقت کو کامیاب کرنے کی کوشش کریں مایوسی نہ آنے پائے۔اہم شرکا میں قاری عبد السمیع،قاری احرار الحق جوہر قاسمی،قاری محمد ارشاد ،مفتی اسحاق حقی ،مولانا احسان اللہ قاسمی ،مفتی گلزار، قاری فاروق جامعی منڈولی، قاری افتخار نعمانی، قاری عاقل، مفتی فاروق قاسمی گنگوہی، قاری محمد ولی اللہ، حافظ محمد خلیل، قاری تصور علی، قاری ارشاد، مفتی کفیل الرحمن، مولانا نور محمد رحیمی، قاری ممتاز احمد کاشفی، مولانا خورشید احمد، قاری فخر الدین اشرف، مفتی نثار سنگم وہار، قاری شمعون وغیرہ کے اسما قابل ذکر ہیں۔

You might also like