Baseerat Online News Portal

بہار انتخابات: ووٹنگ کے وقت میں اضافہ ، قرنطین مریض بھی ڈالیںگے ووٹ

نئی دہلی،25؍ستمبر(بی این ایس )
الیکشن کمیشن نے بہار میں بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان کیا ہے۔ ووٹنگ تین مرحلوں میں ہوگی۔ پہلے مرحلے میں ووٹنگ 28 اکتوبر کو ہوگی جبکہ دوسرے اور تیسرے مرحلے میں ووٹنگ 3 نومبر اور 7 نومبر کو ہوگی۔ ووٹوں کی گنتی 10 نومبر کو کی جائے گی۔ کمیشن نے کورونا بحران میں ہونے والے انتخابات کے لئے ٹھوس انتظامات کیے ہیں۔ کورونا کی وجہ سے ہر بوتھ پر صرف 1000 ووٹر ہی ووٹ ڈال سکیں گے۔ پہلے یہ تعداد 1500 ہوتی تھی۔ کمیشن کے مطابق قرنطین مریض بھی ووٹ ڈال سکیں گے۔ کورونا سے متاثرہ مریض ووٹنگ کے آخری ایک گھنٹہ میں ووٹ دے سکیں گے۔پولنگ کے آخری گھنٹے، یعنی شام 5 بجے سے شام 6 بجے تک صرف کورونا سے متاثرہ مریضوں کے لئے رکھا گیا ہے۔ اسی وجہ سے کمیشن نے ووٹنگ کا وقت بڑھا دیا ہے۔ ریاست بھر کے بوتھ پر 23 لاکھ ہینڈ گلبس استعمال ہوں گے۔ تمام بوتھ پر قرنطین مریضوں کے لئے خصوصی انتظامات کیے جائیں۔ کورونا سے پولنگ ورکرز کی حفاظت کے لئے بوتھ پر 6 لاکھ پی پی ای کٹس کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ کمیشن کے مطابق 46 لاکھ ماسک پولنگ عملہ استعمال کرے گا۔ ریاست بھر کے بوتھوں پر سات لاکھ ہینڈ سینیائٹرز کا انتظام کیا جائے گا۔ ان کے علاوہ 6 لاکھ فیس شیلڈ بھی استعمال میں لایا جائے گا ۔ کمیشن نے کہا کہ بہار میں 18 لاکھ سے زیادہ مہاجروطن مزدور ہیں، جن میں سے 16 لاکھ ووٹ ڈالے جانے کا امکان ہے۔چیف الیکشن کمشنر سنیل اروڑا نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ 80 سال تک کے لوگ پوسٹل بیلٹ سے ووٹ ڈال سکیں گے۔ ہر بوتھ پر صابن، سینیٹائزر اور دیگر چیزیں مہیا کی جائیں گی۔ کمیشن نے ڈور ٹو ڈور مہم میں صرف پانچ افراد کو جانے کی اجازت دی ہے۔ کورونا کی وجہ سے امیدوار نامزدگی اور حلف نامہ آن لائن بھی پُر کرسکیں گے۔ڈپوزٹ بھی آن لائن جمع ہوگا ۔ نامزدگی کے وقت دو سے زیادہ افراد پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ کمیشن نے انتخابی مہم کے دوران ہاتھ ملانے پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

You might also like