Baseerat Online News Portal

بہار اسمبلی انتخابات: کورونا کے تحفظ کے لئے سخت انتظامات، بوتھوں کی تعداد میں ہوگا اضافہ 

 

نئی دہلی،25؍ستمبر(بی این ایس )  

الیکشن کمیشن بہار اسمبلی انتخابات کا اعلان کردیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے اپنے اعلان میں کہا ہے کہ بہار میں انتخابات تین مراحل میں ہوں گے۔ انتخابات 28 اکتوبر سے شروع ہوں گے۔ ووٹوں کی گنتی 10 نومبر کو ہوگی۔ پہلے مرحلے میں 71، دوسرے مرحلے میں 94 نشستوں کے لئے 3 نومبر کو انتخابات ہونے ہیں۔ تیسرے مرحلے میں 7 نومبر کو 78 نشستوں پر انتخابات ہوں گے۔ الیکشن کمشنر سنیل اروڑا نے کہا کہ ضابطہ اخلاق آج سے نافذ ہوگیا ہے۔الیکشن کمشنر نے بتایا کہ اس بار ووٹنگ صبح سات سے چھ بجے تک ہوگی۔ اس بارووٹنگ کے وقت کو ایک گھنٹہ تک بڑھایا گیا ہے۔ اورامیدواروں کے لئے آن لائن نامزدگی کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ قرنطین میں رہنے والے کورونا مریض بھی ووٹ ڈال سکیں گے۔ انتخابات کی تیاری کے لئے 46 لاکھ ماسک، 6 لاکھ پی پی ای کٹس، 7.2 کروڑ سنگل یوزہینڈ گلبس ، 7 لاکھ ہینڈ سینیٹائزر، 23 لاکھ گلبس کا انتظام کیا جائے گا۔واضح رہے کہ 243 رکنی بہار اسمبلی کی میعاد 29 نومبر کو ختم ہورہی ہے۔ الیکشن کمیشن نے آگاہ کیا ہے کہ انتخابات کے دوران کورونا کے روک تھام کے لئے متعدد اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اس کے تحت ضرورت مند لوگوں کو پوسٹل بیلٹ کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔ متاثرہ یا مشتبہ کورونا مریضہ انتخابات کے دن ووٹنگ کے آخری گھنٹوں میں ووٹ دیں گے۔ ان کے ہمراہ ہیلتھ اتھارٹی بھی ہوگی۔ معذور رائے دہندگان کے لئے ووٹنگ پولنگ بوتھ کے گراؤنڈ فلور پر کی جائے گی اور انہیں وہیل چیئر وغیرہ کی سہولت دی جائے گی۔کورونا وائرس بحران کے دوران ملک میں پہلا الیکشن ہونے جارہا ہے۔ الیکشن کمشنر نے کہا کہ اس وبا کے درمیان پوری دنیا کے انتخابی اداروں کی سب سے بڑی تشویش یہ تھی کہ انتخابات کا انعقاد ہونا ہے یا نہیں۔ اس وبا نے بڑے اتار چڑھاو دیکھے ہیں۔ یہ بات ہمارے لئے واضح تھی کہ ایک وبا کے دوران لوگوں کے جمہوری حقوق کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں انتخابات کرانے ہیں۔ ہم نے راجیہ سبھا انتخابات اور قانون ساز کونسل کے انتخابات سے آغاز کیا تھا۔سنیل اروڑا نے کہا کہ بہار کے انتخابات کے بارے میں بھی سوالات اٹھائے جارہے تھے لیکن آج ہم آپ کے سامنے بڑی ریاستوں میں سے ایک کے لئے انتخابات کی تاریخوں کا اعلان کررہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 1500 کے بجائے ایک ہزار ووٹر پولنگ بوتھ میں آئیں گے، جس کی وجہ سے پولنگ بوتھ کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔

You might also like