Baseerat Online News Portal

سابق مرکزی وزیر جسونت سنگھ کا انتقال ، پی ایم سمیت متعدد رہنماؤں کا اظہارِ غم

نئی دہلی، ۲۷؍ستمبر(بی این ایس )
سابق مرکزی وزیر جسونت سنگھ کا طویل علالت کے بعد اتوار کو یہاں انتقال ہوگیا۔ وہ 82 سال کے تھے۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے دیگر سینئر رہنماؤں نے سنگھ کے انتقال پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے بے لوث ہوکر ملک کی خدمت کی ہے اور انہیں سیاست اور معاشرہ کے متعلق امورمیں ان کے منفرد انداز فکر کے لئے یاد رکھا جائے گا۔ سنگھ نے دہلی کے آرمی کے ریسرچ اینڈ ریفرل اسپتال میں آخری سانس لی۔ وہ سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے قریبی سمجھے جاتے تھے۔فوجی اسپتال نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی افسوس کے ساتھ بتایا جارہا ہے کہ سابق مرکزی وزیر جسونت سنگھ کا آج صبح 6.55 بجے انتقال ہوگیا، انہیں 25 جون کو اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ آج صبح انہیں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہوگیا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ماہر ڈاکٹروں کی ٹیم نے انھیں بچانے کی پوری کوشش کی لیکن وہ بچ نہیں سکے۔ خاندانی ذرائع کے مطابق ان کی تدفین راجستھان کے جودھ پور میں ہوگی۔ سابق فوجی افسر سنگھ اگست 2014 میں اپنے گھر میں گرنے کے بعد سے بیمار تھے۔ انہیں آرمی کے ریسرچ اینڈ ریفرل اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ تب سے وہ متعدد بار اسپتال میں داخل رہے ، اس سال جون میں وہ دوبارہ اسپتال میں داخل ہوئے تھے۔اپنے تعزیتی پیغام میں وزیر اعظم نے کہا کہ جسونت سنگھ کو سیاست اور معاشرہ امور میں انوکھے انداز فکر کے لئے یاد کیا جائے گا۔ انہوں نے بی جے پی کو مضبوط بنانے میں بھی اپنی شراکت ادا کی ۔ ان کے اہل خانہ اور چاہنے والوں سے میری تعزیت پیش ہے ۔ پی ایم مودی نے کہا کہ اٹل جی کی حکومت میں وہ وزیر خزانہ ، وزیر دفاع اور وزیر خارجہ جیسے اہم عہدوں پر فائز رہے اور ان شعبوں میں گہرے اثرات مرتب کئے ،میں ان کے انتقال سے رنجیدہ ہوں۔ جب بی جے پی نے 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں سنگھ کو ٹکٹ نہیں دیا تھا ، تب انہوں نے راجستھان کے باڑمیر سے آزاد امیدوار کی حیثیت سے میدان میں اترے تھے ، تاہم
شکست کا سامنا کرنا پڑاتھا۔ جسونت سنگھ نے لوک سبھا میں مغربی بنگال کے دارجلنگ پارلیمانی حلقہ کی نمائندگی بھی کی۔وزیر اعظم نے فون پر جسونت سنگھ کے بیٹے سے فون پر بات کی اور اظہار تعزیت کیا۔راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ راجستھان سے تعلق رکھنے والے ایک سینئر رہنما سینئر جسونت سنگھ کے انتقال سے مجھے دکھ ہے۔ایشور سے پرارتھنا ہے کہ سنگھ کی روح کو شانتی ملے ور ان کے اہل خانہ کو غم برداشت کرنے کی ہمت ہو ۔ مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے بھی ان کی موت پر غم کا اظہار کیا ہے ،اور کہا کہ ان کی موت ملک کے لئے ناقابل تلافی نقصان ہے۔وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے بھی جسونت سنگھ کی موت پر اظہار تعزیت کیا، انہوں نے کہا کہ جسونت سنگھ نے پوری لگن سے ملک کی خدمت کی ۔راج ناتھ سنگھ نے لکھا کہ جسونت سنگھ کو ان کی دانشورانہ صلاحیتوں اور ملک کی خدمت میں نمایاں شراکت کے لئے یاد کیا جائے گا۔ انہوں نے راجستھان میں بی جے پی کو مضبوط بنانے میں بھی اہم کردار ادا کیا۔ غم کی اس گھڑی میں ان کے اہل خانہ اور چاہنے والوں سے میری تعزیت پیش ہے ۔ بی جے پی صدر جے پی نڈا نے کہا کہ جسونت سنگھ کے انتقال کی خبر افسوسناک قرار دیا ، انہو ںنے کہا کہ حکومت میں مختلف عہدوں پر رہتے ہوئے انہوں نے لوگوں کے لئے اپنے فرائض کی انجام دہی کے لئے ہر لمحہ وقف کیا۔

You might also like