Baseerat Online News Portal

عملی زندگی میں علمی بصیرت کا مظاہرہ کرنا ہوگا، زہیر صدیقی ملت کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کے لئے دانشور طبقہ آگے آئیں،

عملی زندگی میں علمی بصیرت کا مظاہرہ کرنا ہوگا، زہیر صدیقی
ملت کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کے لئے دانشور طبقہ آگے آئیں،

رفیع ساگر /بصیرت آن لائن

جالے۔ موجودہ تعلیمی واخلاقی زوال کے دور میں نئی نسل کی قابل رشک تعلیمی مستقبل اور ان کی دینی واخلاقی تربیت کے لئے ہر گاوں میں دانشور طبقہ کو آگے آنا ہوگا تاکہ ہماری کوششوں سے نئی نسل کی زندگی کو مناسب سمت مل سکے ۔مذکورہ باتیں اکسیلینٹ کوچنگ سنٹر گورہول شریف کے ڈائریکٹر زہیر صدیقی نے نمائندہ سے ایک خاص ملاقات میں کہیں۔انہوں نے کہا کہ علم کے حصول کا پہلا مقصد اپنی اصلاح ہے۔ علم حاصل کر کے اپنی عملی زندگی میں اس کا استعمال کرنا چاہئے تاکہ ہم سے ہماری نسلوں کو مثبت پیغام مل سکے۔مسٹر زہیر صدیقی نے کہا کہ آج دنیا کی بہت سی قومیں اور ملک ترقی یافتہ ہیں اور ترقی کر رہے ہیں لیکن ہم پسماندہ ہیں۔ ایسا نہیں ہے کہ ہم تعداد، محنت و جفاکشی، دیانت داری اور ایثار جیسی اخلاقی صفات میں کسی سےکم ہیں، بلکہ دیکھا جائے تو اب بھی ہم ان خوبیوں میں دوسری اقوام سے بہت بہتر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کے معاملے میں پچھڑتے چلے جانے کا نتیجہ ہے کہ ہم معاشی اور سماجی پہچان مکمل نہیں بنا پا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دیگر اقوام نے تعلیم کو ایک خاص سمت دے کر اپنے اندر بیداری، جد و جہد، حوصلہ، دور اندیشی اور وقت کی پابندی جیسی خوبیاں پیدا کیں اور نفع و نقصان کی بنیاد پر مقصد کا تعین کرکے مادّی طور پر ہم سے آگے نکل گئے، جب کہ ہم بہت سے معاملات میں ان کے دست نگر ہوگئے۔انہوں نے کہا کہ
انسان کو زندگی میں اپنی منزلیں آسانی سے ملتی ہیں اور علم کے ذریعہ ہی انسان دنیا کو اپنی عظمت کا احساس دلانے کے قابل بن پاتاہے مگر اس کے لئے ہمیں اپنے اندر خود اعتمادی کا جذبہ پیدا کرنا ہوگا ۔
زہیر صدیقی نے کہا کہ کوئی بھی قوم یا جماعت اپنی تعداد سے نہیں بلکہ اپنے مذہبی و اخلاقی تشخص سے پہچانی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش رہتی ہے کہ دانشور طبقہ سے مل کر سماج میں تعلیم کی فضا ہموار کر حصول تعلیم کا مزاج پیدا کیا جائے ۔جس خود اعتمادی کے ساتھ وہ تعلیمی سفر کو جاری رکھے ہوئے ہیں ہے اس کی روشنی دور تک پہونچے گی اور آنے والے وقت میں اس کے دور رس اثرات سامنے آئیں گے اور قوم کے حسین سپنوں کی تعبیر ثابت ہوگی۔

You might also like