Baseerat Online News Portal

ایس بی آئی چیئرمین نے نئی دہلی میں ایف آئی اینڈ ایم ایم کے نئے دفتر کا افتتاح کیا

پٹنہ28ستمبر(بی این ایس )
ملک کے سب سے بڑے قرض دہندہ ، اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) نے اپنے ڈپٹی ایم ڈی ، ایف آئی اینڈ ایم ایم ورٹیکل کے دفتر کو نئی دہلی منتقل کردیا ہے۔ نئے دفتر کا افتتاح ایس بی آئی کے چیئرمین مسٹر رجنیش کمار نے کیا۔ اس موقع پر بینک کے سینئرآفیسر ، مسٹر سنجیو نوٹیال ، ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر موجود تھے ، جو اس ورٹیکل کے سربراہ کے عہدے پر فائز ہیں۔ مالی شمولیت کے اپنے سفر پر مزید زور دینے کے لئے ، بینک نے حال ہی میں بینک کے اندر ایک علیحدہ ایف آئی اینڈ ایم ورٹیکل تشکیل دیا تھا۔ یہ ورٹیکل خاص طور پر دیہی اور نیم شہری علاقوں میں مالی شمولیت اور مائیکرو مارکیٹوں پر توجہ مرکوز کرے گی ، تاکہ دور دراز علاقوں کے صارفین کو بہتر تجربہ فراہم کیا جاسکے۔اس نئے ورٹیکل میں ، بینک کے ذریعہ زراعت اور اس سے وابستہ سرگرمیوں اور مائیکرو / چھوٹے کاروباری اداروں کو قرض فراہم کرایا جئے گا۔ دیہی اور نیم شہری علاقوں میں لگ بھگ 8000 شاخوں کی نشاندہی کی گئی ہے تاکہ چھوٹے کاروباروں اور کسانوں کو مائیکرو قرضوں سمیت مائیکرو سیگمنٹ کو خصوصی خدمات فراہم کی جاسکیں۔نئی دہلی کے دفتر کا افتتاح کرتے ہوئے ، ایس بی آئی کے چیئرمین مسٹر رجنیش کمار نے کہا ، “آج بینک کی تاریخ کا ایک اور اہم دن ہے کیونکہ ہم نے اپنا ایف آئی ایم ایم ورٹیکل دفتر ممبئی سے نئی دہلی منتقل کردیا ہے۔ اس سے سرکاری اداروں اور عہدیداروں کے ساتھ ہم آہنگی پر زور دینے اور ان کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ اس کوشش کا مقصد تمام طبقات کے صارفین کو بہتر بینکاری خدمات کی دستیابی بڑھاناہے۔مقامی سطح پر خصوصی زور دینے اور آسانی سے چلانے کے لئے ، ایف آئی اینڈ ایم ایم ورٹیکل میں ریجنل بزنس آفس(آر بی او) اور ڈسٹرکٹ سیلس ہب کے چیف جنرل منیجر ، جنرل منیجر ، ریجنل مینیجر کے نیچے چار ٹیئر ڈھانچہ شامل ہوگا ، تاکہ کریڈٹ ڈلیوری سسٹم کو مضبوط بنایا جاسکے اور چھوٹے قرضوں کی فوری منظوری اور تقسیم کے عمل کو کم کیا جاسکے۔ اس میں بنیادی طور پر ضلعی سطح پر موجودگی کو مستحکم کرنے پر فوکس کیا جائے گا تاکہ ایف آئی اینڈ ایم ایم نیٹ ورک کی شاخوں کو مستقل فروخت اور ریکوری کی مدد فراہم کی جاسکے۔ ڈی ایس ایچ کسٹمر سروس پوائنٹس (سی ایس پی) کی رسائی کو مضبوط بنانے میں بھی اہم کردار ادا کرے گا اور یہ صارفین کو بہتر معیار اور خدمات کی دستیابی کو یقینی بنائے گا۔

You might also like