Baseerat Online News Portal

وسط مدتی الیکشن خارج ازمکان، اتحادکی حکومت پانچ برس چلے گی:سنجے راوت

 

ممبئی29ستمبر(بی این ایس )

شیوسیناکے رکن پارلیمنٹ سنجے راوت نے مہاراشٹر میں وسط مدتی انتخابات کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ادھوٹھاکرے کی سربراہی میں مہاراشٹروکاس اگھاڑی حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرے گی۔ راوت نے منگل کے روزنامہ نگاروں کوبتایاہے کہ ریاست کے عوام ابھی تک انتخابات نہیں چاہتے ہیں۔ایک دن قبل ہی بی جے پی کے صدرچندرکانت پاٹل نے ریاست میں وسط مدتی انتخابات کے امکان کے بارے میں پوچھا تھا کہ کوئی وسط مدتی انتخابات نہیں چاہتا ہے ، لیکن عدم استحکام کا حل کوئی نہیں بتا سکتاہے۔ہر کوئی کچھ کرنے کی کوشش نہیں کرے گا لیکن اگر اتحاد کام نہیں کرتا ہے تو پھر کوئی متبادل نہیں ہوگا۔گفتگوکے دوران راوت نے سوشانت سنگھ راجپوت کیس پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ انتخابی پروگراموں کا اعلان کرنے والے الیکشن کمیشن نے پٹیل کو کچھ ذمہ داری دی ہوسکتی ہے اور اس سلسلے میں مزید معلومات بھی ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ لیکن میں چندرکانت پاٹل کے بیان کو مثبت طور پر لیتا ہوں۔ انہوں نے کہاہے کہ مہاراشٹرکے عوام انتخابات نہیں چاہتے ہیں۔ میں یہ بھی کہہ رہاہوں کہ الیکشن نہیں ہوناچاہیے۔ لہٰذااودھو ٹھاکرے کی حکومت پانچ سال چلے گی اورانتخابات نہیں ہوں گے۔پچھلے ہفتے بہارکے سابق ڈائریکٹر جنرل پولیس گپتیشور پانڈے کے رضاکارانہ ریٹائرمنٹ (وی آر ایس) کے بعد نتیش کمار کی قیادت والی جنتا دل یونائیٹڈ (جے ڈی یو) میں شمولیت کے بارے میں پوچھے جانے پرشیوسیناکے رکن پارلیمنٹ نے کہاہے کہ ہر شخص کونوکری سے استعفیٰ دینے کے بعد سیاست میں آنے کاحق ہے۔انھوں نے کہاہے کہ ہماری بہارکے ڈائریکٹرجنرل پولیس ، پانڈے صاحب سے کوئی ذاتی دشمنی نہیں ہے۔ ہم دفترمیں رہتے ہوئے ممبئی پولیس کے خلاف ان کے بیان کے خلاف ہیں۔ممبئی پولیس کی توہین کرنے کے خلاف ہیں۔

You might also like