Baseerat Online News Portal

کویت اپڈیٹ:شیخ صباح الاحمدالصباح کے جانشین شیخ نواف الاحمد الصباح نئے امیرکویت ،آج اٹھائیں گے حلف

آن لائن نیوزڈیسک
حکومت کویت نے کہا ہے کہ ولی عہد شیخ نواف الاحمد الصباح کو نیا امیر مقرر کیا گیا ہے۔ وہ بدھ 30 ستمبرکو اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔
کویت کی خبر رساں ایجنسی کونا نے سرکاری ٹی وی کے حوالے سے بتایا کہ کویتی کابینہ کا منگل کو ہنگامی اجلاس ہوا۔ کابینہ نے شیخ صباح الاحمد الصباح کے جانشین کی حیثیت سے ولی عہد شیخ نواف کو امیر کویت تسلیم کرلیا۔
کویتی پارلیمنٹ کے سپیکر مرزوق الغانم نے بتایا کہ نئے امیر کویت بدھ کو مقامی وقت کے مطابق صبح گیارہ بجے پارلیمنٹ میں آئینی حلف اٹھائیں گے۔
ذرائع ابلاغ کے مطابق سپیکر نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ’ شیخ نواف سے ملاقات کی ہے۔قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس بدھ کو ہوگا جس میں نئے امیرکویت آئین کے آرٹیکل 60 کے تحت آئینی حلف لیں گے‘۔
سعودی خبررساں ادارے ایس پی اے کے مطابق کویت میں چالیس دن کے سوگ کا اعلان کیا گیا ہے۔ تین دن تک سرکاری ادارے، وزارتیں اور محکمے بند رہیں گے۔ اتوار سے تمام ادارے کھل جائیں گے۔

نئے امیر کویت کون ہیں؟
کویتی خبررساں ادارے کونا کے مطابق ولی عہد شیخ نواف الاحمد الصباح اہم کلیدی عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں۔
شیخ نواف الاحمد الصباح 25 جون 1937 کو کویت شہر میں پیدا ہوئے اور وہ کویت کے دسویں حکمراں شیخ احمد الجابر المبارک الصباح کے چھٹے بیٹے ہیں جو 1921 سے 1950 کے دوران کویت کے حکمراں تھے۔
امیرکویت نے 7 فروری 2006 کو شیخ نواف کو ولی عہد مقرر کیا تھا۔ 20 فروری 2006 کو کویتی پارلیمنٹ نے ولی عہد کی حیثیت سے شیخ نواف کے ہاتھ پر بیعت کی تھی۔
کونا کے مطابق کویتی آئین کی دفعہ 4 اور ریاست میں اقتدار کے قانون کی دفعہ ایک میں کہا گیا ہے کہ ’کویت موروثی ریاست ہے۔ اس کا اقتدار مبارک الصباح کی اولاد میں ہی رہے گا‘-
کویت میں قانون اقتدار کی دفعہ چار میں تحریر ہے کہ ’جب بھی امیر کویت کا منصب خالی ہوگا ولی عہد امیر کویت بن جا ئیں گے‘-
آئین کی دفعہ 60 میں ہے کہ امیر کویت اپنے اختیارات استعمال کرنے سے قبل کویتی پارلیمنٹ کے خصوصی اجلاس میں حلف اٹھائیں گے۔
شیخ نواف 14 برس سے کویت کے ولی عہد ہیں۔ 60 برس کے دوران کئی سرکاری عہدوں پر سرفراز رہ چکے ہیں۔ وزیر دفاع اور وزیرداخلہ بھی رہے ہیں۔
کویت پر عراق کے حملے کے بعد بننے والی پہلی حکومت میں وہ 20 اپریل 1991 کو وزیر محنت و سماجی امور بنے تھے۔

You might also like