Baseerat Online News Portal

غازی آباد: پھرملی نامعلوم خاتون کی لاش ،پہلے سے ہی دو معاملات کی خاک چھان رہی ہے پولیس

غازی آباد،4اکتوبر(بی این ایس )
غازی آباد میں ایک نوجوان خاتون کی لاش ملنے کے بعد سنسنی پھیل گئی۔ خدشہ ہے کہ خاتون کو مارنے کے بعد لاش یہاں پھینک دی گئی ہے۔ اس خاتون کی عمر 20 سال کے لگ بھگ بتائی جاتی ہے۔ فی الحال اس خاتون کے جسم پرکوئی چوٹ نہیں ہے۔ پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا ہے۔ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ کے بعد ہی معلوم ہو سکے گا کہ عورت کی موت کیسے ہوئی ہے۔ اس سے پہلے بھی اس طرح کی بہت سی نامعلوم لاشوں کی وجہ سے ایسا لگتا ہے کہ غازی آباد لاشوں کے ٹھکانے کے لئے ایک ڈمپنگ گراؤنڈ بن رہا ہے۔معلومات کے مطابق خاتون کی لاش غازی آباد کے علاقے لونی بارڈر کے شیوا کالونی میں جھاڑیوں سے ملی۔ جب صبح دیکھنے آنے والے لوگوں نے پولیس کو اطلاع دی تو محکمہ میں ہلچل مچ گئی۔ اس سے پہلے بھی ایسی بہت سی لاشیں ملی ہیں۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش کو قبضہ میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا۔ بتایا جاتا ہے کہ اس خاتون کی عمر 20 سال ہے اور اس کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ خاتون کی موت کی وجہ کیا ہے اس کا بھی پتہ نہیں چل سکا ہے۔ اب پوسٹ مارٹم رپورٹ سے معلوم ہوگا کہ خاتون کی موت کیسے ہوئی؟۔فی الحال اس نوجوان خاتون کے جسم پر کوئی زخم یا داغ دکھائی نہیں دے رہا تھا، تاہم سوال یہ بھی ہے کہ کیا لڑکی کی شناخت مٹانے کی کوشش کی گئی ہے؟۔ بتادیں کہ لڑکی کے ساتھ کوئی کاغذ نہیں ملا ہے کہ اس کی شناخت ہوپائے۔اس سے قبل بھی ایک نوجوان خاتون کی لاش صاحب آباد کے علاقے میں اٹیچی سے ملی تھی۔ پولیس آج تک انکشاف نہیں کر سکی ہے۔ اس سے پہلے بھی لونی میں اسی طرح سے ایک خاتون کی لاش ملی تھی۔ پولیس اب تک اس کا انکشاف نہیں کر سکی ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ غازی آباد لاشوں کے ڈھیر بنانے کا مرکز بن رہا ہے۔ آرام سے قتل کرنے کے بعد لاشیں یہاں پھینک دی گئیں اور پولیس کچھ بھی کرنے سے قاصر ہے۔

You might also like