Baseerat Online News Portal

ہاتھرس کیس: گورکھپور میں کانگریس نے چسپاں کیے پوسٹر ، اسمرتی ایرانی اور سواتی سنگھ کوبتایاگمشدہ

گورکھپور،4اکتوبر(بی این ایس )
کانگریس پارٹی کے کارکنان نے گورکھپور شہر میں یوپی سرکار میں مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی اور وزیر سواتی سنگھ کے پوسٹر لگائے ہیں ، جن میں لکھاہے کہ وہ لاپتہ ہیں۔ پوسٹر کے اوپری حصے میں ’گمشدہ افراد کی تلاش‘ لکھا ہوا ہے۔ اس کے تحت ’ہاتھرس کی بیٹی کو کب انصاف ملے گا اور دوسری کی بیٹی کو اپنی بیٹی کب سمجھیں گی‘ جیسے نعرے ہیں۔اتوار کے روز کانگریس کارکنوں نے گورکھپور کے بتیہتا میں منشی پریم چند پارک کے قریب دیواروں اور گاڑیوں پر پوسٹر لگائے۔ پوسٹر میں مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی اور یوپی حکومت کی وزیر سواتی سنگھ کے لاپتہ ہونے کی اطلاع ہے۔ کانگریس کے لیڈر انور حسین کی سربراہی میں کانگریس کارکنان نے یہ پوسٹر بنایا۔کانگریس لیڈر انور حسین نے کہا کہ ہاتھرس کیس میں پورا ملک ابل رہا ہے۔ معاشرے کا ہر طبقہ اس کی مخالفت کر رہا ہے لیکن بی جے پی کی دونوں وزیر خاموش ہیں۔ انور کا کہنا تھا کہ جب وہ حزب اختلاف میں تھیں تو خواتین سے ہراساں کئے جانے کے ہر معاملے میں وہ آواز اٹھاتی تھیں، انہیں یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ وہ پہلے خواتین ہیں ، پھر کسی بھی سیاسی پارٹی کی ممبر یا کارکن۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ انہیں خواتین پر ہونے والے جبر پر بھی آواز اٹھانا چاہئے۔ انور نے کہا وہ لوگ کہاں ہیں؟ وہ متاثرین کے گھروں میں جاتے اور اپنی حکومت کے خلاف آواز اٹھاتے ۔ انہوں نے کہا کہ راہل اور پرینکا گاندھی مستقل طور پر لڑ رہے ہیں۔ پرینکا گاندھی بھی ایک خاتون ہیں۔ پولیس والوں نے انہیں دھکابھی دیا۔پورا کانگریس خاندان اس کے ساتھ ہے۔ جب تک متاثرہ کے اہل خانہ کو انصاف نہیں مل جاتا ، یہ احتجاج جاری رہے گا۔

You might also like