Baseerat Online News Portal

عاپ لیڈر وملیش ٹھاکر اب آزاد امیدوار کے طور پر انتخابی دنگل میں اتریں گے،  کورونا کی حساسیت کے سبب عاپ بہار میں چناؤ نہیں لڑنے کا لے چکی ہے فیصلہ 

عاپ لیڈر وملیش ٹھاکر اب آزاد امیدوار کے طور پر انتخابی دنگل میں اتریں گے،

کورونا کی حساسیت کے سبب عاپ بہار میں چناؤ نہیں لڑنے کا لے چکی ہے فیصلہ

رفیع ساگر /بصیرت آن لائن

جالے۔ کورونا بحران کو دیکھتے ہوئے عام آدمی پارٹی کے ذریعہ بہار اسمبلی چناو لڑنے کا بائیکاٹ کئے جانے کے بعد عام آدمی پارٹی بہار کے صوبائی صدر(ٹیکنیکل) وملیش ٹھاکر اب جالے اسمبلی حلقہ سے آزاد امیدوار کے طور پر چناو لڑیں گے۔انہوں نے اپنے فیس بک پوسٹ میں اس بات کا اشارہ دیا ہے۔اپنے حامیوں سے موجودہ سیاسی منظرنامے پر گفتگو کے بعد وملیش ٹھاکر نے پورے دم خم کے ساتھ آزاد امیدوار کے طور پر اپنی دعویداری پیش کرتے ہوئے بتایا کہ حالانکہ وہ پارٹی لائن سے الگ انتخاب لڑ رہے ہیں لیکن انہیں پارٹی کا ضرور سپورٹ ملے گا۔انہوں نے بتایا کہ پارٹی کے اعلیٰ کمان کے ذریعہ دیئے گئے ہدایات پر عمل کرتے ہوئے جالے اسمبلی حلقہ کی ترقی کو اپنا مشن بناکر انتخابی میدان میں اتر کر عوام سے کئے گئے وعدوں پر بھی مکمل کھڑا اتروں گا۔ انہوں نے کہا عوام کے مزاج اور اس کے مطالبہ کے بعد ہی ہم نے بطور آزاد امیدوار انتخاب لڑنے کا ارادہ کیا ہے۔مسٹر وملیش ٹھاکر نے کہا کہ جالے کی ترقی کو ابھی مزید رفتار کی ضرورت ہے جبکہ اس سے قبل بھی جالے کے بیٹا نے جالے کو ٹھگنے کا کام کیا ہے اور آخری مرحلے میں مختلف مقامات پر سنگ بنیاد ڈال کر عوام کو بہلانا چاہا ہے لیکن اب یہاں کے عوام سب کچھ سمجھ رہے ہیں اس مرتبہ کسی کے بہکاوے میں نہ آئینگے اور اپنی چٹانی ایکتا کا مظاہرہ کر کے اپنے پسند کے لیڈر کو کامیاب کرنے کا کام کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ پارٹی کے بائیکاٹ کرنے کے بعد افواہوں کا بازا گرم کر رہے ہیں جبکہ حقیقت اس کے برعکس ہے۔ کورونا کی حساسیت کو دھیان میں رکھ کر ہی پارٹی کے اعلیٰ کمان نے بہار چناو میں اپنے امیدوار نہیں کھڑے کرنے کا اعلان کیا ہے لیکن مجھے اپنی پارٹی کا مکمل طور پر تعاون مل رہا ہے اس میں کوئی شک نہیں ہے۔ ادھر دیگر ذرائع سے موصولہ اطلاع کے مطابق عام آدمی پارٹی کے ذریعہ بھی وملیش ٹھاکر کو انتخاب میں معاونت کر نے کی بات کہی گئی ہے علاوہ ازیں پارٹی کے سربراہوں کی جانب سے بھی حمایتی لیٹر اور ویڈیو جاری کرنے کی بات کہی گئی ہے۔اب آگے کا مرحلہ کافی دلچسپ ہوگا کہ عوام وملیش ٹھاکر کو آزاد امیدوار کے طور پر کتنا حمایت کرتی ہے

You might also like