Baseerat Online News Portal

نتیش کمارنے 115سیٹوںمیں صرف گیارہ مسلم امیدواراتارے 

 

یادواورپسماندہ طبقات کوترجیح،خواتین کوبھی خاطرخواہ ٹکٹ،دس کامیاب ممبران کے ٹکٹ کاٹے

پٹنہ8اکتوبر(بی این ایس )

چیف منسٹر نتیش کمار کی پارٹی جنتا دل یونائیٹڈ نے بہار اسمبلی انتخابات کے لیے کاغذات نامزدگی کاپہلامرحلہ ختم ہونے سے ایک دن قبل تمام 115 نشستوں کے لیے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا۔بہارکی مسلم آبادی یادوکے قریب قریب ہے لیکن صرف گیارہ مسلمانوں کوٹکٹ دیاگیاہے۔اس سے مسلم طبقہ ناراض ہے ۔یہ طبقہ پہلے ہی نتیش کمارکے اردومخالف اقدام اورسی اے اے پرووٹنگ کی وجہ سے خاصاناراض ہے۔سکٹاسے خورشید،شیوہرسے شرف الدین،ارریہ سے شگفتہ عظیم،ٹھاکرگنج سے نوشادعالم،کوچادھامن سے مجاہدعالم،امورسے صباظفر،دربھنگہ شہرسے فرازفاطمی،کانٹی سے محمدجمال،مڑھوراسے  الطاف راجو،مہواسے اسماء پروین اورڈمرائوںسے انجم آراامیدواربنائے گئے ہیں۔ ٹکٹوں کی تقسیم میں نتیش کمارنے اوبی سی ،ایس سی اورایس ٹی طبقوں پرخصوصی توجہ دی ہے اور اس جماعت کو 70 سے زیادہ نشستیں یعنی 60 فیصد سے زیادہ ٹکٹ دیئے ہیں۔اوبی سی طبقے کو 40 ٹکٹ دیئے گئے ہیں۔ ان کے علاوہ انتہائی پسماندہ طبقات کوتیس ، شیڈیولڈ ذات(ایس سی) کوایک،شیڈول ٹرائب (ایس ٹی) کو ایک ، مسلم کوگیارہ اور اعلیٰ ذات کو 16 ٹکٹ دیئے گئے ہیں۔تیش کمار نے 18 نئے کارکنوں کو موقع دیتے ہوئے ایک وزیر سمیت دس سیٹنگ ایم ایل اے کا ٹکٹ کاٹا ہے۔ خواتین کو کل 22 سیٹیں دی گئی ہیں،جو ٹکٹوں کی کل تقسیم میں 20 فیصد حصہ ہیں۔ ان میں 13 خواتین امیدوار شامل ہیں جنھیں پہلی بارٹکٹ ملا ہے۔

You might also like