Baseerat Online News Portal

بہار انتخابات میں ہندوتوا کاتڑکالگائیں گے یوگی آدتیہ ناتھ، بی جے پی نے تیارکررکھا ہے میدان

لکھنو،16اکتوبر(بی این ایس )
بہار کے انتخابات میں یوپی کے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ ہندوتوا کا تڑکا لگائیں گے۔ یوپی کے وزیر اعلی 20 اکتوبر سے انتخابی مہم شروع کریں گے۔ بی جے پی کشمیری دہشت گرد سے لے کر جناح تک کی بہار میں انٹری کراچکی ہے۔ یوگی کو ملک بھر میں ہندوتوا کا برانڈ سمجھا جاتا ہے۔ بی جے پی نے اس فارمولے پر اپنی انتخابی میٹنگوں کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ بننے کے بعد سے ہی انہیں ہر انتخاب میں پارٹی کی جانب سے اسٹار پرچارک بنایا گیا ہے۔وزیر اعظم نریندر مودی 23 اکتوبر کو ساسارامسے انتخابی مہم کا آغاز کریں گے۔ اس سے صرف تین دن پہلے یوپی کے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ کیمور میں پہلی انتخابی ریلی نکالیں گے۔ اسی دن وہ ارول اور روہتاس میں جلسے بھی کریں گے۔ ان علاقوں میں بی جے پی کے باغی امیدواروں نے این ڈی اے کی پریشانی بڑھا دی ہے۔ یہ یوپی سے ملحقہ علاقے ہیں۔ یوگی کی شبیہ ایک سخت ہندو مذہبی لیڈر کی ہے۔ وہ ایسے معاملات اٹھاتے ہیں جو فرقہ وارانہ پولرائزیشن کا باعث بنے ہیں۔ بی جے پی نے پہلے ہی یوگی کے لئے ہندوتوا کی تیاری تیار کرلی ہے۔ مرکزی وزیر مملکت برائے امور داخلہ نیتانند رائے نے کہا ہے کہ اگر بہار میں مہاگٹھ بندھن کی حکومت بنی تو کشمیر کے دہشت گرد یہاں پناہ لیں گے۔ویسے یوپی میں بھی ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں لیکن یوگی آدتیہ ناتھ کی تیاری بہار میںتابڑتوڑریلیاں منعقد کرنا ہے، وہ تقریبا 18 میٹنگیں کریں گے۔ دن میں کم از کم تین، بی جے پی کے ساتھ بہت سے جے ڈی یو لیڈران نے اپنے علاقے میں یوگی کی ریلی کا مطالبہ کیا ہے۔ ان مقامات پر یوگی کا پروگرام رکھنا ہے جہاں مودی کی ریلی نہیں ہوگی۔ یوپی کے وزیر اعلی بننے کے بعد یوگی نے سب سے پہلے بہار کا دورہ کیا۔ انہوں نے دربھنگہ کے راج میدان میں ایک ریلی نکالی۔

You might also like