Baseerat Online News Portal

لڑکیوں کی شادی کی مناسب عمر سے متعلق تبادلہ خیال جاری، رپورٹ آتے ہی کاروائی کی جائے گی:نریندر مودی

نئی دہلی،16اکتوبر(بی این ایس )
وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کے روز کہا کہ حکومت لڑکیوں کی شادی کی مناسب عمر کے لئے بنائی گئی کمیٹی کی رپورٹ پر کاروائی کرے گی۔ وزیر اعظم نے یہ بات اقوام متحدہ کے فوڈ اینڈ ایگریکلچرل آرگنائزیشن (ایف اے او) کی 75 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقدہ ایک پروگرام میں جمعہ کو ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کہی۔ انہوں نے کہاکہ بیٹیوں کی شادی کی مناسب عمر کا فیصلہ کرنے کے لئے بھی بات چیت جاری ہے، مجھے جلدی فیصلہ کرنے کے لئے ملک بھر سے باشعور بیٹیوں کے خطوط ملتے ہیں، میں ان تمام بیٹیوں کو یقین دلاتا ہوں کہ رپورٹ آتے ہی حکومت اس رپورٹ پر کاروائی کرے گی۔
قابل ذکر کہ مودی نے اس سال 15 اگست کو لال قلعہ کے فصیل سے اپنے خطاب میں مودی نے لڑکیوں کی شادی کی مناسب عمر طے کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دینے کا اعلان کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا تھاکہ ہم نے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ بیٹیوں کی غذائی قیمت کیا ہو، ان کی شادی کی صحیح عمر کیا ہے۔ اس کی اطلاع آنے کے ساتھ ہی بیٹیوں کی شادی کی عمر کے بارے میں بھی مناسب فیصلے لئے جائیں گے۔اس وقت ملک میں لڑکیوں کی شادی کی کم از کم عمر 18 رکھی گئی ہے، جبکہ لڑکوں کی عمر کی حد 21 سال ہے۔ وزیر اعظم نے آج اپنے خطاب میں کہا کہ کم عمری میں حاملہ ہونا، تعلیم کی کمی، معلومات کی کمی، صاف پانی کی عدم دستیابی، بہت سی وجوہات کی بناء پر، غذائی قلت کے خلاف جنگ میں متوقع نتائج برآمد نہیں ہوئے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں مختلف سطحوں پر کچھ محکموں کی جانب سے کوششیں کی گئیں، لیکن ان کا دائرہ محدود تھا یا ٹکڑوں میں بکھر گیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ جب مجھے 2014 میں ملک کی خدمت کا موقع ملا، تب میں نے ملک میں ایک نئی کوشش کا آغاز کیا۔ ہم مربوط سوچ کے ساتھ آگے بڑھے اور جامع نقطہ نظر کے ساتھ آگے بڑھے، تمام رکاوٹوں کو ختم کرکے ہم نے کثیر الجہتی حکمت عملی پر کام کرنا شروع کیا۔انہوں نے کہاکہ غذائیت سے نمٹنے کے لئے ایک اور اہم سمت اختیار کی جارہی ہے، اب ملک میں ایسی فصلوں کو فروغ دیا جارہا ہے جس میں پروٹین، آئرن، زنک وغیرہ جیسے غذائیت سے بھرپور مادے زیادہ ہوں۔

You might also like