Baseerat Online News Portal

چراغ پاسوان کے بیانات پر گھر میں ہی بھونچال

پٹنہ،16اکتوبر(بی این ایس )
این ڈی اے کی اہم حلیف ایل جے پی کے سربراہ چراغ پاسوان نے بہار کے وزیراعلی نتیش کمار کے خلاف مورچہ کھولا ہے۔ روزانہ وہ نتیش حکومت کی کارکردگی پر سوال اٹھارہے ہیں اور بہار اسمبلی انتخابات میں جے ڈی یو امیدوار کے خلاف اپنی پارٹی کے امیدوار کھڑا کررہے ہیں جس کہ سبب این ڈی اے میں بحران جیسی کیفیت بنی ہوئی ہے۔ اسی درمیان آج ایک اہم خبر موصول ہوئی ہے کہ چراغ پاسوان کے چھوٹے چچا اور ویشالی سے رکن پارلیمنٹ پشو پتی پارس چراغ کے اس طرح کے بیانات سے بہت ہی دلبرداشتہ ہیں۔ انہوں نے آج وزیراعلی نتیش کمار کی زبردست تعریف کی ہے اور کہا کہ وہ نتیش کابینہ میں دو سال تک وزیر بھی رہے نتیش کمار بہت ہی شریف سنجیدہ اور ترقی پسند وزیراعلی ہیں حالانکہ میں ابھی 20تاریخ تک سیاسی بیانات جاری کرنے سے قاصر ہوں اس لئے کہ میرے بڑے بھائی جو میرے سرپرست بھی رہے ہیں رام ولاس پاسوان کا شرادھ 20اکتوبر کو ہے اس کے بعد ہی میں اس موضوع پر اظہار خیال کروںگا۔ اس طرح یہ طے ہوگیا ہے کہ ایل جے پی کنبہ میں سب کچھ ٹھیک ٹھاک نہیں ہے گھر میں ہی انتشار ہے اس لئے چراغ پاسوان کینتیش کمار کے طریقہ کار پر سوال اٹھانا افسوسناک ہے۔ انہوں نے آج ریاستی وزیراعلی نتیش کمار سے گذارش کی ہے کہ وہ سرکاری سطح پر ایک تجویز مرکزی حکومت کو بھیجے کہ وہ رام ولاس پاسوان کے گراں قدر خدمات کے سبب انہیں بھارت رتن کے اعزاز سے نوازے۔انہوںنے کہا کہ اس موضوع پر 20اکتوبر کے بعد وہ خود وزیراعلی سے ملاقات کریںگے اور ان سے اس طرح کی تجویز مرکز کو بھیجنے کی گذارش کریںگے۔ اس کے ساتھ ہی پشوپتی پارس نے مرکز ی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ دہلی کے 10نمبر جن پتھ کواٹر کو رام ولاس میوزیم بنائے۔
ادھر بی جے پی کے قومی ترجمان سمبت پاترا نے کہا ہے کہ بہاراسمبلی انتخابات میںایل جے پی جھوٹ اور دھوکہ دہی کی سیاست کررہی ہے جو افسوسناک ہے۔انہوں نے آج دہلی میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ بہارانتخابات میں بی جے پی، جنتا دل یونائیٹڈ، ہندوستانی عوام مورچہ اور وکاس شیل انسان پارٹی کے درمیان اٹوٹ اتحاد ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ بی جے پی کی کوئی’بی‘یا’سی‘ٹیم نہیں ہے اور اس پر کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے۔بی جے پی ترجمان نے کہا کہ ایل جے پی صرف ووٹ کاٹنے والی پارٹی ہے جو اپنے وجود کو بچانے کی لڑائی لڑرہی ہے۔یہی وجہ ہے کہ ایل جے پی پرفریب حالات پیداکرکے دوسروں کے کندھے پر بندوق رکھنا چاہتی ہے، جو قابل مذمت ہے۔مسٹر پاترا نے کہا کہ قومی جمہوری اتحاد(این ڈی اے)جمہوریت، ترقی اور استحکام کے لیے الیکشن لڑرہی ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ اسمبلی انتخابات میں تین چوتھائی اکثریت کے ساتھ این ڈی اے ایک مرتبہ پھر بہار میں حکومت بنائے گی۔

You might also like