Baseerat Online News Portal

سی اے اے پر بھاگوت کے متنازعہ بیان پر اویسی کا ردِعمل کہا ہمیں بچہ سمجھ کر نہ بہلائیں

پٹنہ:راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سربراہ موہن بھاگوت نے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے بارے میں کہا ہے کہ کسی کو بھی اس قانون سے خطرہ نہیں ہے۔ ملک میں مسلم کمیونٹی کو الجھانے کی سازش کی جارہی ہے۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے ان کے بیان پر شدید رد عمل کا اظہار کیاہے۔انہوں نے کہا کہ ہم بچے نہیں ہیں کہ ہمیں کوئی بہلادے ۔ بی جے پی نے یہ نہیں کہاہے کہ سی اے اے + این آر سی کا ایک ساتھ کیا مطلب ہے؟ اگر یہ صرف مسلمانوں کے لیے ہی نہیں ہے تو پھر تمام قوانین سے مذہب کا لفظ نکال دیں۔ اویسی نے کہاہے کہ جان لیں کہ ہم بار بار مظاہرہ کرتے رہیں گے ، جب تک کہ قانون میں خود کو ہندوستانی ثابت کرنے کی بات ہو۔ہم ایسے تمام قوانین کی مخالفت کریں گے ، جن میں مذہب کی بنیاد پر لوگوں کی شہریت کا فیصلہ کیا جائے گا۔بہار انتخابات کے تناظر میں کانگریس اور آر جے ڈی پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ لوگ سی اے اے کے خلاف احتجاج کے دوران آپ کی خاموشی کو فراموش نہیں کریں گے۔جب بی جے پی لیڈران لوگوں کودراندازکہہ رہے تھے، آر جے ڈی اور کانگریس نے منہ بند رکھا۔ انھوں نے کچھ نہیں کہا۔اس سے قبل ناگپور میں دسہرہ پروگرام میں موہن بھاگوت نے کہا کہ ہم نے دیکھا کہ ملک میں سی اے اے مخالف مظاہرے ہوئے ، جس سے معاشرے میں تناؤپیدا ہوا۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ پڑوسی ممالک میں فرقہ وارانہ وجوہات کی بناء پربے گھر ہوئے ہیں،انہیں اس سی اے اے کے ذریعے شہریت دی جائے گی -ہندوستان کے شہریت ترمیمی قانون میں کسی خاص فرقے کی مخالفت نہیں ہے۔

You might also like