Baseerat Online News Portal

مہاراشٹرا میں دیوالی کے بعد کھلیں گے اسکول اور مذہبی مقامات، پٹاخوں کے بجائے دیئے جلانے وزیر اعلی اُدھو ٹھاکرے کی اپیل

ممبئی: 8؍نومبر (بی این ایس ) مہاراشٹر حکومت ریاست میں دیوالی  کے بعد تمام احتیاطی تدابیر کے ساتھ اسکول کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے  نے اتوار کو تفصیلی اعلامیہ جاری کیا۔ ادھو ٹھاکرنے نے کہا کہ دیوالی کے بعد سے ہم تمام حفاظتی اقدامات پر عمل آوری کرتے اسکولوں کو کھولنے جا رہے ہیں۔ اس کے علاوہ مذہبی مقامات کو بھی کھولا جائے گا۔ بتادیں کہ مہاراشٹر میں مذہبی مقامات کو کھولے جانے کو لیکر کافی تنازعہ ہوا تھا۔ دیوالی کے بعد ہونے والی آلودگی کو لیکر ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ آلودگی کووڈ-19 کے اثر کو بڑھا سکتی ہے۔ ادھو ٹھاکرنے نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ دیوالی پر پٹاخوں کی جگہ دیئے جلائیں۔  انہوں نے کہا کہ دیوالی کے بعد 15 دن اہم ہوں گے۔ ہمیں دھیان رکھنا ہوگا کہ کہیں دوبارہ لاک ڈاؤن کے نفاذ کی صورتحال پیدا نہ ہوجائے۔  ماسک کو لازمی طور پر استعمال کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ بھیڑ میں بغیر ماسک کے گھومنے والا کووڈ 19 کا مریض تقریبا 400 لوگوں کو متاثر کر سکتا ہے۔ ادھو ٹھاکرے نے لوکل ٹرین کی خدمات کو لیکر کہا کہ ہم مرکزی حکومت سے عام لوگوں کیلئے لوکل ٹرین کی سروس شروع کرنے کی اپیل کر رہے ہیں۔ اس پر جلد ہی فیصلہ کیا جائے گا۔
اس سے پہلے سنیچر کو ادھو ٹھاکرے اور ریاستی اسکول کے وزیر تعلیم نے اسکولوں کو لیکر کچھ اہم ہدایت بھی لوگوں کو دی تھی۔ مہاراشٹر کے اسکول کی وزیر تعلیم ورشا گائیک واڑ نے کہا کہ ریاست کے اسکولوں میں نویں اور بارہویں کلاس کے طلبا کیلئے 23 نومبر سے اسکول دوبارہ کھل جائیں گے۔ گائک واڑ نے سی ایم ادھو ٹھاکرے کے ذریعے منعقد ایک ویڈیو کانفرنس میں یہ اعلان کیا۔ ٹھاکرے نےکہا کہ 9 ویں سے 12 ویں تک کی کلاس کووڈ19 سے متعلق گائیڈ لائنس کے ساتھ دیوالی کے بعد پھر شروع ہوں گی۔ وہیں ادھو ٹھاکرے نے کہا جو طلبا بیمار ہیں یا ان کے افرادِ خاندان بیمار ہیں، انہیں اسکول نہیں بھیجا جانا چاہئے۔

You might also like