Baseerat Online News Portal

آکسفورڈ ویکسین اپریل میں آسکتی ہے،دو خوراک کی قیمت ہوسکتی ہے 1000 روپئے: ادار پونا والا

نئی دہلی:20 ؍نومبر( بی این ایس )
ہندوستان میںکورونا وائرس کے لیے ویکسین بنارہی ہے کمپنی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کے سی ای او ادار پونا والا نے بتایا کہ کمپنی صحت اہلکاروں اور بزرگوں کے لیے کورونا کی آکسفورڈ ویکسین اگلے سال اپریل تک مارکیٹ میں آسکتی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ عام لوگوں کے لئے ویکسین کی دو خوراک کی قیمت ایک ہزار روپے تک ہوسکتی ہے۔ تاہم یہ آخری ٹرائل کے نتائج اور ریگولیٹری اداروں سے منظوری پر منحصر ہوگا۔پونا والا نے کہا کہ ہندوستان میں ہر فرد کو ٹیکہ لگانے میں دو یا تین سال لگیں گے۔ یہ صرف فراہمی میں کمی کی وجہ سے نہیں بلکہ اس لئے کہ آپ کو بجٹ، ویکسین، سازو سامان، بنیادی ڈھانچے کی ضرورت ہے اور پھر لوگوں کو ٹیکہ لگوانے کے لئے راضی ہوناچاہئے اور یہی وہ عوامل ہیں جو آبادی کا 80-90 فیصد لوگوں کے لیے ضروری ہے۔ویکسین کی قیمت کے سوال پر انہوں نے بتایا کہ حکومت یہ ویکسین 3-4 امریکی ڈالر میں حاصل کرے گی، کیونکہ یہ بہت بڑی مقدار میں لیا جارہا ہے۔ اس کی قیمت تقریباً COVAX ہوگی۔ ابھی بھی اس کی قیمت کو مارکیٹ میں موجود دیگر ویکسین سے کم رکھی جائے گی۔ جب ان سے ویکسین کی صلاحیت کے بارے میں سوالات پوچھے گئے تو انہوں نے کہا کہ آکسفورڈ-ایسٹرزینکا ویکسین اب تک بزرگ افراد میں بھی کارگر ثابت ہوئی ہے ۔

You might also like