Baseerat Online News Portal

گھنشیام پور میں محبت کی شادی پر لڑکے کی ماں کو انسانیت سوز سزا، شادی شدہ خاتون کی مہادلت معذور کے ساتھ جبرا شادی کروائی، 2 ملزمین گرفتار 13 اب بھی فرار

گھنشیام پور میں محبت کی شادی پر لڑکے کی ماں کو انسانیت سوز سزا، شادی شدہ خاتون کی مہادلت معذور کے ساتھ جبرا شادی کروائی، 2 ملزمین گرفتار 13 اب بھی فرار

 

رفیع ساگر /بی این ایس

جالے۔ گھنشیام پور تھانہ علاقہ کے آدھارپور گاوں میں 1 شادی شدہ خاتون کے سر کا بال کاٹنے کے علاوہ جبرا مہادلت معذور شخص سے اس کی مانگ میں سندور ڈلوا کر شادی کروانے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد سینئر پولیس کپتان بابو رام کی ہدایت پر متعلقہ تھانہ کی پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 2 ملزمین کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ 13 ابھی بھی فرار چل رہے ہیں۔ معلوم ہو کہ گاوں میں ہی 1 لڑکا اور 1 لڑکی کے مابین عشق چل رہا تھا جس کے بعد دونوں نے گھر سے باہر نکل کر محبت کی شادی رچالی۔جیسے ہی دونوں کے شادی کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تو لڑکی کے چچی نے تھانہ میں لڑکا سمیت کل 7 لوگوں کو نامزد کرتے ہوئے اغوا کا معاملہ درج کروایا تھا۔اس کے بعد لڑکی کے اہل خانہ نے دیوالی کی سہ پہر لڑکے کے گھر میں گھس کر بے رحمی سے لوگوں کے ساتھ مارپیٹ ، توڑپھوڑ اور لوٹ پاٹ مچایا پھر دبنگوں نے ظلم کی ساری حدیں عبور کرتے ہوئے زبردستی لڑکے کی ماں کو گھسیٹ کر اپنے گھر لے گئے اور وہاں انسانیت کو شرمسار کردینے والی واقعہ کو انجام دیا جس میں خاتون کے سرکا بال کاٹ کر اس کی مانگ میں زبردستی 1 مہادلت طبقہ کے معذور سے سندور ڈلواکر شادی کروا دیا۔ جیسے ہی واقعہ کی خبر انتظامیہ تک پہونچی تو حرکت میں آئی پولیس نے متاثرہ کی طرف سے اومیش جھا کی درخواست پر گاوں کے ہی دلیپ جھا ، للن جھا اور انیل جھا سمیت 10 مرد اور 5 خواتین کو نامزد ملزمان بناتے ہوئے ایف آئی آر درج کر متاثرہ خاندان کی حفاظت کیلئے پولیس اہلکاروں کی تعیناتی کردی۔ پوچھنے پر بیرول ایس ڈی پی او دلیپ کمار جھا نے بتایا کہ میں نے خود گاوں جاکر پورے معاملے کی جانکاری لی ہے ۔اس معاملے میں تھانہ صدر کو ہدایت دی گئی ہیکہ وہ جلد از جلد ملزمین کی گرفتاری کو یقینی بنائے فی الحال 2 افراد گرفتار ہوئے بقیہ 13 کی گرفتاری کیلئے پولیس مسلسل جگہ جگہ چھاپہ ماری کر رہی ہے۔ ایس ڈی پی او نے بتایا کہ معاملے میں شامل 1 بھی قصوروار کو بخشا نہیں جائے گا اور قانون توڑنے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔واقعہ کے بعد گاوں میں پولیس کی نقل وحرکت تیز رہنے کے حالات معمول پر ہیں۔

You might also like