Baseerat Online News Portal

ٹریڈ یونینزکے ذریعے 26نومبرکو بلائے گئے بھارت بند میں ایس ڈی پی آئی حصہ لے گی

نئی دہلی:۲۴؍نومبر(پریس ریلیز) سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی نائب صدر دہلان باقوی نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ 26نومبر کو 10ٹریڈ یونینز کے ذریعے مرکزی حکومت کی مزدور مخالف پالیسیوں کے خلاف بلائے گئے بھارت بند میں ایس ڈی پی آئی حصہ لے گی۔ ٹریڈ یونین لیڈران کے مطابق، تمام شعبوں سے وابستہ مزدور، سوائے ان مزدوروں کے جو لازمی خدمات کا حصہ ہیں وہ 26نومبر کے بھارت بند میں حصہ لیں گے۔ ایس ڈی پی آئی نے 26نومبر اور 27نومبر کو ہورہے دو روزہ کسانوں کے احتجاج کی بھی حمایت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس بند کا انعقاد مزدور مخالف اور کسان مخالف بلوں کو منسوخ کرنے،ہر ٹیکس ادا نہ کرنے والے خاندان کے اکاؤنٹ میں 7,500/-روپئے کی ادائیگی،ضرورت مند خاندانوں کو ماہانہ 10کلو گرام اناج کی فراہمی، MGNREGSمیں ہر سال 200دنوں کا کام، شہری علاقوں میں زیادہ اجرت اسکیم کا نفاذ، ریلوے، بندرگاہوں، دفاع، بجلی، فضائیہ، کان کنی اور فنانس جیسے شعبوں میں نجکاری کا خاتمہ،PSUsمیں ملازمین کی زبردستی برخاستگی نہ کرنے اور سب کیلئے پنشن کے مطالبے کو لیکر ہورہا ہے۔ ایس ڈی پی آئی قومی نائب صدر دہلان باقوی نے اس بات کی طرف خصوصی نشاندہی کرتے ہوئے کہا ہے کہ بغیر تیاری کے ملک بھر میں لاک ڈاؤن نے مزدوروں اور چھوٹے پیمانے پر کاروبار کرنے والے کمپنیوں کو بے روزگار کردیا ہے۔ حالیہ زرعی بلوں نے کسانوں کی کمر توڑ دی ہے۔ چھوٹے اور درمیانے درجے کے صنعتیں کشمکش میں ہیں اور بہت سے صنعتی یونٹ بھاری نقصانات کے سبب بند ہوگئے ہیں۔ عام آدمی کی زندگی تباہ ہوگئی ہے۔ حکومت مزدوروں اور کسانوں کی پریشانیوں کا کوئی حل تلاش کرنے کے بجائے ان کے سیاسی ایجنڈوں پر عمل در آمد کرنے میں مصروف ہے۔ ان حالات میں حکام سے جواب طلب کرنے کیلئے عوام بھارت بند بلانے کیلئے مجبور ہوئے ہیں۔ کارپوریٹ حامی مرکزی این ڈی اے حکومت جو آر ایس ایس کے پشت پناہی پر کار فرما ہے، 2014میں اقتدار میں آنے کے بعد سے کارپوریٹس کے ‘وکاس ‘کیلئے کام کررہی ہے۔ حکومت مزدوروں اور کسانوں کی پریشانیوں، بے روزگاری یا ملک کے معاشی زوال کے تعلق سے پریشان نہیں ہے۔ ملک کی جی ڈی پی منفی حالت میں ہے۔ آزادی کے بعد سے بے روزگاری ہر وقت زیادہ ہے۔ مزدور اور کسان دو وقت کی روٹی کیلئے جدوجہد کررہے ہیں، پھر بھی وزیر اعظم کہتے ہیں کہ ہندوستان میں لوگ ملک کے سنہری دور میں جی رہے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی قومی نائب صدر دہلان باقوی نے پارٹی کارکنان کو بھارت بند میں فعال طور پر حصہ لینے کی اپیل کرتے ہوئے یقین دہانی کرائی ہے کہ ایس ڈی پی آئی حقوق کے حصول کیلئے عوام الناس کی کسی بھی تحریک کے ساتھ مضبوطی کے ساتھ کھڑا ہوگی۔

You might also like