Baseerat Online News Portal

بنگال ،یوپی اورگجرات نہیں،وفاقی ڈھانچہ کوسبوتاژنہیں کرسکتے

ممتا بنرجی کاجارحانہ تیور،پی ایم کیئرس فنڈکابھی حساب مانگا
کولکاتہ یکم دسمبر(بی این ایس )
مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ اورترنمول کانگریس کی سربراہ ممتابنرجی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے خلاف سخت بیان دیاہے۔ انہوں نے کہاہے کہ بنگال گجرات یا یوپی نہیں ہے۔ بنگال بنگال ہے۔ کچھ بیرونی غنڈے یہاں آرہے ہیں۔ لیکن جان لو کہ آپ وفاقی ڈھانچے کو ختم نہیں کرسکتے ہیں۔ممتابنرجی نے پی ایم سے پی ایم کیئرس فنڈکابھی حساب مانگاہے۔ممتابنرجی نے اپنی تقریروں پر وزیر اعظم نریندر مودی کوبھی نشانہ بنایاہے۔ممتا بنرجی نے پریس کانفرنس میں کہاہے کہ ہم آئین کے مطابق چلتے ہیں۔ ریاستی حکومت ایک عمل درآمد کرنے والی اتھارٹی ہے توکیاہمیں بی جے پی کے ذہن پر عمل کرناچاہیے؟ جب ریاست میں پہلے سے ہی کوئی اسکیم چل رہی ہے تو پھر ہم اسی طرح کا منصوبہ کیوں چلائیں؟ کیونکہ بی جے پی کہہ رہی ہے؟ انہیں فنڈ کہاں سے ملتے ہیں؟ یہ پوری ریاستی حکومت کی ٹیکس کی رقم ہے۔ ہم اپنی اسکیم کو 100 فیصد فنڈ دیتے ہیں ، لیکن ریاستی حکومتوں کو ان کے منصوبوں کی ادائیگی کرنی پڑتی ہے۔ممتا بنرجی نے سخت لہجے میں کہاہے کہ بنگال گجرات نہیں ہے نہ ہی یوپی ہے۔ بنگال بنگال ہے۔ باہر کے کچھ بدمعاشوں نے یہاں دستک دینا شروع کردی ہے۔آپ وفاقی ڈھانچے کو سبوتاژ نہیں کرسکتے ہیں۔ ممتا بنرجی نے مرکزی حکومت کونشانہ بنایا۔ وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ وہ (مرکزی حکومت) مرکزی ایجنسیوں کے توسط سے ہماری حکومت کو پریشان کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔مجھے معلوم ہے کہ وہ انتخابات سے قبل مزیدکام کریں گے۔

You might also like