Baseerat Online News Portal

اگر سچی لگن زاہد تیرے سجدہ میں آجائے٭کوئی مشکل نہیں دنیا تیرے حجرہ میں آجائے

ادبی تنظیم’بزم ظفر‘ کے زیراہتمام مشاعرہ و کوی سملین کا انعقاد
دیوبند:8؍ جنوری(سمیر چودھری؍بی این ایس)
ادبی تنظیم’بزم ظفر‘ کے زیراہتمام گزشتہ شب یہاں آشو پیلیس میں ’آنجہانی شری کانت ورما‘کی یاد میں ایک کوی سمیلین و مشاعرہ کاانعقاد کیاگیا۔ جس میں مقامی و بیرونی شعراء نے اپنا شاندار کلام پیش کرکے دیر شب تک سامعین کو محظوظ کیا۔ افتتاح سابق رکن اسمبلی معاویہ کے بیٹے حیدر علی نے فیتہ کاٹ کیا،شمع روشن رکن میونسپل بورڈ رکن چودھری فیصل پرویز اور اجے گاندھی نے کی۔صدارت دلشاد گوڑ نے کی جبکہ نظامت کے فرائض جگر دیوبندی نے انجام دیئے۔ دیر شب تک جاری مشاعرہ کا آغاز نعیم اختر کی نعت پاک سے ہواہے۔ مشاعرہ میں پسند کئے گئے چنندہ اشعار قارئین کی نذر ہیں۔
تیر تو آچکے رگِ جاں تک ٭ اب پشیماں ہواکرے کوئی : ڈاکٹر مکرم ادنیٰ میرٹھی
ہمیں وہ روز ایک ملال دیتے ہیں ٭ یہ اور بات کہ ہم ہنس کے ٹال دیتے ہیں : دوّیہ نیہا
تم بھی مندر میں کرو پوجا وطن کے خاطر٭ ہم بھی اب چل دیئے محبوبؔعبادت کے لئے : محبوب حسن میرانپوری
حسین خواب دکھایا دکھاکر چھوڑ دیا ٭ ہم ہی پاگل ہیں محبت میں چلے آتے ہیں : نور دیوبندی
اگر سچی لگن زاہد تیرے سجدہ میں آجائے٭ کوئی مشکل نہیں دنیا تیرے حجرہ میں آجائے : ساحل مادھوپوری
علاوہ ازیں حسرت دیوبندی، نعیم اختر ،ڈاکٹر صابر بہٹوی،علیم واجد، جاوید آسی،عثمان عثمانی کیرانوی،پردیپ مایوس،عنصر انجم،واجد میرٹھی،فہیم اثر،ندیم انور، سلمان دلکش،نفیس احمد نفیس،انور مضطر ،سہیل دیوبندی وغیرہ نے بھی اپنا کلام پیش کیا۔ خصوصی شرکاء میں سلیم قریشی،اشفاق اللہ خاں،اسلم مکھیا،انصار مسعودی،قاری آفتاب،ادریس انصاری،نصیر انصاری،حاجی شمیم، مقیم عباسی وغیرہ سمیت درجنوں افراد موجودرہے ۔ آخر میں کنوینر جاوید آسی و نعیم اختر اور مشیر خاص ڈاکٹر زبیر اسلیم انصار نے سبھی مہمانوں اور سامعین کا شکریہ اداکیا۔

You might also like