Baseerat Online News Portal

امریکی پارلیمنٹ پر حملے کے دوران مظاہرین کے ہاتھ میں ہندوستانی پرچم

ورون گاندھی اور تھرور کے درمیان لفظی جنگ
نئی دہلی ،08؍جنوری (بی این ایس )
امریکہ میں ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں نے کیپٹل ہل میں ہنگامہ کھڑا کردیا اور سینیٹ پر قبضہ کرنے کی کوشش کی۔ ان ہزاروں مظاہرین کے ہجوم میں ایک ہندوستانی پرچم بھی لہرا رہا تھا ، جس کی وجہ سے ہندوستان کے سوشل میڈیا پر طوفان برپا ہوگیا۔ اس معاملے پر بھارتیہ جنتا پارٹی کے ورون گاندھی اور کانگریس کے ششی تھرور کے مابین ٹویٹر پر بحث ہوئی ۔در اصل بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی نے جمعرات کو ایک ویڈیو ٹویٹ کیا تھا، جس میں کیپٹل ہل کے باہر احتجاج کے دوران ہندوستانی پرچم لہرا رہا تھا۔ ورون گاندھی نے لکھاکہ وہاں پر ہندوستانی پرچم کیوں ہے؟ یہ ایک ایسی لڑائی ہے جس کاہندوستان کبھی بھی حصہ نہیں بننا چاہتا ہے۔ورون گاندھی کے اسی ٹویٹ پر کانگریس کے رکن پارلیمنٹ ششی تھرور نے جواب دیا ، انہوں نے لکھاکہ کچھ ہندوستانی بھی ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں کی ذہنیت کے حامل ہیں ، جو پرچم کو عزت کے بجائے ہتھیار کے طور پر استعمال کرتے ہیں اور جو ان کے مطابق نہیں ہوتاہے۔ ، اسے ملک مخالف کہتے ہیں۔ وہاں دیکھا دکھ رہا وہ پرچم ہم سب کے لئے انتباہ ہے۔ کانگریس کے رکن پارلیمنٹ ششی تھرور کے اس ٹویٹ پر ورون گاندھی نے بھی جواب دیا۔ ورون نے لکھا کہ اپنی شان دکھانے کے لیے پرچم لہرانے والے لوگوں کا مذاق اڑانا آج کل آسان ہو گیا ہے ،نیز غلط مقصد کے لئے پرچم لہرانا آسان ہوگیا ہے۔

You might also like