Baseerat Online News Portal

آپﷺ کی پاکیزہ تعلیمات نے انسانیت کو احترام کا مقام دیا

انجمن اہل السنہ والجماعۃ کے سالانہ آن لائن اجلاس سے مولاناسید بلال حسنی ندوی اور مفتی حذیفہ قاسمی کا خطاب
ممبئی:۹؍جنوری(بی این ایس) انجمن اہل السنہ والجماعۃ ممبئی کا دسواں سالانہ آن لائن اجلاس عام بعنوان ’تحفظ سنت وعظمت صحابہؓ کانفرنس‘ کا آغاز بصیرت آن لائن یوٹیوب چینل پر ۸؍ جنوری سے ہوگیا ہے جو تین دنوں تک جاری رہے گا۔ پہلے دن مفتی حذیفہ قاسمی (ناظم تنظیم جمعیۃ علمائے مہاراشٹر) اور مولانا سید بلال حسنی ندوی (رکن انتظامی دارالعلوم ندوۃ العلماء لکھنو) کے بیانات ہوئے۔ افتتاحی کلمات مولانا محمود احمدخاںدریابادی (جنرل سکریٹری آل انڈیا علماء کونسل) نے پیش کیے، جس میں انہوں نے انجمن کا تعارف اور اس کے اغراض ومقاصد پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ اس موقع پر مولانا نے کہاکہ انجمن اہل السنہ والجماعۃ ممبئی کے اہل حق علماء کی نمائندہ تنظیم ہے جو اپنے قیام سے اب تک مسلمانوں کی دینی رہنمائی کا فریضہ انجام دیتی آرہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہر سال اس کا پروگرام بڑے پیمانے پر کیاجاتا تھا لیکن سال گزشتہ شہریت ترمیمی قانون کی وجہ سے پروگرام کو ملتوی کرنا پڑا تھا، اس سال کورونا کی عالمی وباء کی وجہ سے اسے آن لائن پیش کرنا پڑرہا ہے۔ مولانا مفتی حذیفہ قاسمی نے اپنے مفصل بیان میں اسلام کے اخلاقی نظام پر روشنی ڈالی ۔ انہوں نے کہاکہ رسولﷺ جس دور میں دنیا میں تشریف لائے اس وقت انسانیت کتنی دکھی تھی اس دور میں آپ نے انسانیت کو تقدس بخشا، صنف نازک کو تقدس بخشا، مزدوروں اور ملازموں کو تقدس بخشا، حقوق ادا کرنے کی تعلیم دی۔ انہوں نے کہاکہ آپﷺ کی پاکیزہ تعلیمات نے انسانیت کو احترام کا مقام دیا، غریبوں کو احترام کا مقام بخشا۔ انہوں نے کہاکہ حضور ﷺ انسانیت کی حفاظت کےلیے وہ پیارا نظام لے کر آئے جسے اپنایا جائے تو پوری دنیا امن وامان کا گہوارہ بن جائے۔ مولانا سید بلال عبدالحی حسنی ندوی نے ’مسلمانوں کی موجودہ پستی اور اس کا علاج‘ کے عنوان پر تفصیلی گفتگو کی۔ انہوں نےقرآن کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ اللہ تعالیٰ نے فرمایا ’تم بہترین امت ہو جسے لوگوں کے لیے برپاکیاگیا ہے‘۔ اللہ نے اس امت مسلمہ کو بطور خاص تمام انسانیت کے لیے برپا کیاہے، ان کو راستہ دکھانے کےلیے برپا کیا ہے، ان کی رہنمائی کے لیے برپا کیا ہے، اور امت مسلمہ کی رہنمائی کا فریضہ ہمارے حضرات علمائے کرام کا ہے۔ ان حضرات کا ہے جنہیں اللہ نے امت کا درد دیا ہے۔ اگر وہ آج اس سے غافل ہوئے تو مسئلہ صرف امت مسلمہ کا نہیں واقعہ یہ ہے کہ مسئلہ پوری انسانیت کا ہے، پوری دنیا کاہے۔ جوکچھ اس وقت ہورہا ہے ، قرآن مجید ایسی کتاب ہے جس میں رہبری ہردور کےلیے ہے، ہر زمانے کےلیے ہے، اور ہرطرح کے حالات کےلیے ہے۔ آج کے اس دور میں جبکہ بعض لوگ مایوسی کی باتیں کرتے ہیں اور بعض ہمارے مسلم بھائیوں کے اندر احساس کمتری پیدا ہونے لگا ہے اور وہ یہ سوچنے لگے ہیں کہ اب کیا ہوگا؟ حالات کیا ہوں گے؟ فکر کرنا اور بات ہے، تدبیریں کرنا اور بات ہے، اندر جو غفلت ہے اسے دور کرنے کےلیے خبردار کرنا اور بات ہے، لیکن خدا نخواستہ اس کے نتیجہ میں ہمارے اندر غفلت پیدا ہو، مایوسی پیدا ہو، ہمارے اندر یہ احساس پیدا ہونے لگے کہ اب تو حالات ایسے ہیں کہ ہم کچھ نہیں کرسکتے ، ہمارے بس میں کچھ نہیں، اگر خدانخواستہ یہ مزاج بنا تو یہ انتہائی خطرناک مزاج ہے۔ اس کے نتائج سنگین نتائج ہوں گے یہ صرف امت مسلمہ ہی کےلیے نہیں بلکہ پوری انسانیت کےلیے خطرناک نتائج ہوں گے۔ واضح رہے کہ پروگرام کاآغاز قاری ابو شحمہ (استاذ مدرسہ ریاض العلوم فرقانیہ گوونڈی) کی تلاوت قرآن پاک سے ہوا۔بارگاہ نبوت میں نعت نبی کا نذرانہ شاعر اسلام تابش ریحان نے پیش کیا۔ نظامت انجمن اہل السنہ والجماعۃ کے جنرل سکریٹری مولانا رشید احمد ندوی نے کی۔ پروگرام کے دوسرے روز مولانا عبدالعلی فاروقی (لکھنو) اور مولانا بدیع الزماں ندوی قاسمی (بنگلور) مقرر خصوصی ہوں گے۔ اتوارکو انجمن کا آخری پروگرام ہوگا جس میں مولانا ابوطالب رحمانی (رکن آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ)اوردارالعلوم دیوبند کے استاذ حدیث مولانا سلمان بجنوری صاحب مقرر خصوصی کی حیثیت سے شریک ہوں گے۔ پروگرام دیکھنے کے لیے بصیرت آن لائن یوٹیوب چینل کو سبسکرائب کریں ۔ لنک یہ ہے:
www.youtube.com/baseeratonline1

 

You might also like