Baseerat Online News Portal

ہریانہ :کرنال ہنگامے کے بعد خطرے میں کھٹرحکومت؟

کرنال، 10 جنوری (بی این ایس )
آج ہریانہ کے کرنال میں کسانوں نے زبردست ہنگامہ کیا ۔ 46 دن تک کالے قوانین کے خلاف احتجاج کرنے والے کسانوں کا غصہ آج بھڑک اٹھا۔ آج کرناال کے کملا گاؤں میں کسان پنچایت ہونے جارہی تھی، جس میں وزیراعلی منوہر لال کھٹر بھی شرکت کرنے جارہے تھے لیکن اس اجلاس سے قبل احتجاج کرنے والے کسانوں کی ایک بڑی تعداد نے یہاں پہنچ کر سب پرقبضہ کرلیا۔ پولیس نے ان پر قابو پانے کے لئے آنسو گیس کے گولے داغے لیکن ہجوم کوروکنا آسان نہیں تھا، تقریبا آدھے گھنٹے تک ہنگامہ چلتارہا۔منوہر لال کھٹر کی مہاپنچایت کو ذہن میں رکھتے ہوئے یہاں بڑی تعداد میں شہر میں پولیس فورس کو تعینات کیا گیا تھا، بہت سارے راستوں پر نقل و حرکت مکمل طور پر روک دی گئی تھی لیکن کسان یہاں کے کھیتوں سے ہوتے ہوئے گائوں میںداخل ہوئے اور ہنگامہ شروع کر دیا۔یہ واقعہ ہریانہ کی کھٹر حکومت کے لئے خطرہ کی گھنٹی سمجھا جارہاہے۔ہنگامے کے بعد کرنال کی مہاپنچایت منسوخ کردی گئی۔

You might also like