Baseerat Online News Portal

بہار کا نظم و نسق نئی حکومت کیلئے سوالیہ نشان

12 سالہ بچی سے اجتماعی زیادتی کے بعد ہائی وے کے کنارے پھینکا ، ملزم فرار
سہسرام، ۱۰؍جنوری ( بی این ایس )
سہسرام میں بدمعاشوں نے 12 سالہ بچی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کی ، بعدازاں اسے NH-2 کے کنارے ایک کھیت میں پھینک کر فرار ہوگئے ۔یہ واقعہ دری گاؤں تھانہ علاقہ کا ہے،ہفتے کی شب گاؤں کے ایک لڑکے نے اپنے 2 دوستوں کے ساتھ مل کر کوچنگ جارہی نابالغ لڑکی کو پہلے اغوا کیا، پھر ہوٹل لے جا کر اجتماعی ہوسناکی کو انجام دیا۔ چاروں درندے اس وقت تک باز نہیں آئے، جب تک کہ متأثرہ بیہوش نہ ہوگئی۔بے ہوشی کی حالت میں اسے این ایچ 2 کے کنارے ایک کھیت میں پھینک کر فرار ہوگئے ۔ اتوار کی صبح جب اس معصوم کی آنکھ کھلی تو وہ خون میں لت پت تھی ۔ کسی طرح وہ گھر والوں کا سامنا کرنے کے لئے جمع خاطر کیا ، اورگھر پہنچی، اورلواحقین کو پوری داستانِ الم سنائی ۔ پوچھے جانے پر متاثرہ نے سانحہ بیان کیا اور ملزموں کی نشاندہی کی ۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی علاقہ میں سنسنی پھیل گئی۔ مقامی لوگوں نے بھی پنچایت کروانے کی کوشش کی۔جب تینوں ملزموں کو اس کا علم ہوا ،تو انہوں نے متاثرہ لڑکی اور اس کے اہل خانہ کو جان سے مارنے کی دھمکی دی۔ اس کے بعد اہل خانہ نے پولیس کو آگاہ کیا، پولیس موقع پر پہنچ گئی اور بچی کو میڈیکل کے لئے اسپتال لے گئی ہے۔ پولیس کے مطابق 3 لڑکوں کے نام والدین کی شناخت کے ساتھ متاثرہ بیان کررہی ہے ۔خیال رہے کہ تینوں درندوں کی عمر 22 سے 25 سال ہے،ملزمان کی تلاش میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔دیہی باشندوں کے مطابق لڑکی کے والد کی دکان لائن ہوٹل سے متصل ہے ، جہاں ہوسناکی انجام دی گئی ہے ، تاہم واقعہ پیش آنے پر دکان بند کردی گئی ہے۔ واقعے کے بعد سے دیہی باشندگان میں سخت اضطرابی پائی جارہی ہے ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ ملزم کی شناخت کے باوجود پولیس ابھی تک ان تینوں کو پکڑ نہیں سکی ہے، جس کی وجہ سے متأثرہ کنبہ نے بہت نقصان اٹھایا ہے، پولیس جلد از جلد تینوں کو گرفتار کر کیفرکردار تک پہنچائے، اور متأثرہ اہل خانہ کو انصاف دلائے ۔

You might also like