Baseerat Online News Portal

مرکز کو 10ویں -12ویں بورڈ امتحانات سے متعلق درخواست کو نمائندہ ماننے کی ہدایت

نئی دہلی، 12 جنوری (بی این ایس )
دہلی ہائی کورٹ نے منگل کو مرکزی حکومت اورسینٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن (سی بی ایس ای) سے کہا کہ وہ پی آئی ایل کو نمائندگی کے طور پرمانیںجس میں کووڈ 19 کے وبا کے پیش نظر دسویں اور بارہویں کلاسز کے بورڈ امتحانات مراکز پرجانے کے نظام کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ چیف جسٹس ڈی این پٹیل اور جسٹس جیوتی سنگھ کی بنچ نے کہا کہ یہاں پرائیویٹ اسکول کے والدین کی تنظیم کی طرف سے دائر درخواست پر سماعت کرنے نہیں جارہی ہے اور تجویز پیش کی گئی ہے کہ اس کو نمائندگی کے طورپرامتحانات مراکز اور سی بی ایس ای کے سامنے پیش کیا جائے یا اس کیس کی واپس لیا جائے بصورت دیگر وہ درخواست خارج کردے گی اور جرمانہ عائد کرے گی۔ اس کے بعد والدین کی تنظیم کے وکیل نے کہا کہ اس درخواست کو نمائندگی کے طورپرماناجائے۔ مرکزی حکومت کی نمائندگی ایڈوکیٹ اجے ڈیگپال نے کی اور سی بی ایس ای کی نمائندگی وکیل کمال دیگپال نے کی۔ بنچ نے کہا کہ اس درخواست کو جلد از جلد عملی جامہ پہنایا جائے اور اس کو نمٹایا جائے جس میں یہ بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ 12 ویں کلاس بورڈ کا امتحان آن لائن لیا جائے یا اوپن بک سے۔بنچ نے کیس کی سماعت سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ وہ امتحانات دینے کے طریقوں سے متعلق ہدایات دینے نہیں جارہی ہے۔

You might also like