Baseerat Online News Portal

آل انڈیا ریڈیو کے کسی بھی اسٹیشن کوبند نہیں کیا جارہا ہے،پرسار بھارتی کی وضاحت

نئی دہلی 13جنوری(بی این ایس )
آج پرساربھارتی نے یہ واضح کیاہے کہ آل انڈیاریڈیو کے کسی بھی اسٹیشن کو کسی بھی ریاست میں بند نہیں کیاجارہاہے۔ہندوستان بھر میں مختلف ذرائع ابلاغ کے ذریعے آل انڈیا ریڈیو کے اسٹیشنوں کو بند کرنے کے دعویٰ کرنے والی غلط رپورٹنگ اور خبروں کا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے، پرسار بھارتی نے یہ بات واضح کی ہے کہ یہ خبریں بے بنیاداورقطعی طورپر غیر درست ہیں۔پرسار بھارتی نے مزید کہا ہے کہ کسی بھی ریاست یا مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کسی بھی آل انڈیا ریڈیو کے اسٹیشن کو نہ تو ڈاؤن گریڈ اور نہ ہی اسے تبدیل کیا جارہا ہے۔مزید برآں آل انڈیا ریڈیو کے تمام اسٹیشن لسانی ،سماجی ثقافتی اور جغرافیائی تنوع کے مطابق مقامی پروگراموں کا سلسلہ نشر کرنا جاری رکھیں گے، جن کا مقصد مقامی ٹیلنٹ کی نگہداشت کو مستحکم کرنے کے آل انڈیا ریڈیو کے مشن کو جاری رکھنا ہے۔پرساربھارتی نے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ وہ آکاش وانی، آل انڈیا ریڈیو، آل انڈیا ریڈیو نیٹ ورک کو مستحکم کرنے کے اپنے منصوبوں کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے ، جن میں سے بہت سے کلیدی پروجیکٹ 2022-2021ء کے دوران نفاذکے لیے تیار ہیں، جس سے ملک بھر میں 100 سے زیادہ نئے ایف ایم ریڈیو ٹرانسمیٹر کے نیٹ ورک کو توسیع دینا شامل ہے۔سینکڑوں اسٹیشنوں اور سینکڑوں ریڈیو ٹرانسمیٹروں پرمشتمل آل انڈیا ریڈیو نیٹ ورک دنیا کے سب سے بڑے عوامی نشریاتی خدمات کے نیٹ ورکوں میں سے ایک ہے، جو کثیر رخی موڈ میں خدمات فراہم کرتا ہے۔ جن میں ٹیرسٹیریل انالوگ ریڈیو(ایف ایم ، ایم ڈبلیو، ایس ڈبلیو)، سٹیلائیٹ ڈی ٹی ایچ ریڈیو(ڈی ڈی مفت ڈش ڈی ٹی ایچ)، انٹرنیٹ ریڈیو(آئی او ایس اینڈرائیڈ پر نیوزآن ایئر ایپ) شامل ہیں۔ڈی ڈی مفت ڈش ڈی ٹی ایچ سروس پر 48 سٹیلائٹ ریڈیو چینلوں کی دستیابی کے ساتھ ہندوستان بھر سے مقامی اور علاقائی آوازیں ریڈیو اسٹیشنوں پر اب ملک گیر پلیٹ فارم پر سنی جاسکتی ہیں، تاکہ لوگ اْنہیں سن سکیں۔پرسار بھارتی ہندوستان میں ڈیجیٹل ٹیرسٹیریل ریڈیو متعارف کرانے کے اپنے منصوبے کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے۔پرسار بھارتی ایف ایم ریڈیوکے لیے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے اختیارات کی ٹیسٹنگ کے ایڈوانس مرحلے میں بھی ہے اور اس کے لیے ایک معیار کو جلد ہی حتمی شکل دی جائے گی تاکہ ہندوستان نے ڈیجیٹل ایف ایم ریڈیو کی شروعات کی جاسکے۔

You might also like