Baseerat Online News Portal

مودی حکومت سپریم کورٹ کے کندھے پربندوق چلارہی ہے

اگرکسان واپس گئے توزرعی قوانین پرروک ہٹادی جائے گی:شیوسینا
ممبئی14جنوری(بی این ایس )
کسانوں کی تحریک پر شیوسینا نے مرکزی حکومت پر حملہ کیا ہے۔ شیو سینانے سامنامیں مرکزی حکومت پر سپریم کورٹ کے کندھے پر بندوق رکھ کر کسانوں کو چلانے کا الزام عائد کیا ہے۔ شیوسینا نے لکھا ہے کہ سپریم کورٹ نے تینوں زرعی قوانین پرپابندی عائد کردی ہے ، اس کے باوجود کسان اس تحریک پر قائم ہیں۔اب حکومت کی طرف سے یہ کہا جائے گا ہے کہ دیکھو،کسان سپریم کورٹ تک کی نہیںسنتے۔سوال سپریم کورٹ کے وقار کا نہیں،ملک کی زرعی پالیسی کاہے۔کسانوں کامطالبہ ہے کہ زرعی قوانین کو منسوخ کیا جائے۔ فیصلہ مرکزی حکومت کو لینا ہوگا۔ حکومت نے عدالت کے کندھے پربندوق رکھ کر کسانوں پر فائرنگ کردی ہے لیکن کسان پیچھے ہٹنے کو تیار نہیں ہیں۔شیوسینانے کہاہے کہ حکومت سنگھوبارڈرسے ایک بارسپریم کورٹ منتقل کرکے کسانوں کی تحریک ختم کررہی ہے۔ اگر کسان اپنے گھر واپس آجاتا ہے تو حکومت زرعی قانون پرپابندی ختم کردے گی اور کسانوں کو روک دے گی ، لہٰذاجوکچھ بھی ہوگا اب ہوگا۔ کسانوں کی تنظیموں اورحکومت کے مابین جاری گفتگو ہر روز ناکام ثابت ہورہی ہے۔ کاشتکار زرعی قانون بالکل نہیں چاہتے ہیں او رحکومت کی جانب سے مباحثے کے لیے آنے والے نمائندوں کو یہ قانون منسوخ کرنے کا حق نہیں ہے۔ کسانوں کے اس خوف کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔

You might also like