Baseerat Online News Portal

’سکھ فارجسٹس‘ نے کیا26 جنوری کو خالصتانی جھنڈا لہرانے پر انعام کا اعلان ، مرکزی وزیر مشتعل

نئی دہلی،14جنوری(بی این ایس )
مرکزی وزیر مملکت برائے زراعت کیلاش چودھری نے بدھ کے روز 26 جنوری کوخالصتانی پرچم لہرانے پرانعام کا اعلان کرنے پر کالعدم تنظیم ’ سکھ فارجسٹس‘ کی سرزنش کی اور کہا کہ اس طرح کی کوئی بھی کوشش غداری ہوگی۔ انہوں نے دہلی کی مختلف سرحدوں پر احتجاج کرنے والی کسانوں کی تنظیموں پر زور دیا کہ وہ 26 جنوری کو تین زرعی قوانین کے خاتمے کا مطالبہ کرتے ہوئے مجوزہ ٹریکٹر ریلی کو منسوخ کریں۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ملک کی عزت نفس مجروح ہوسکتی ہے۔’سکھ فار جسٹس‘ کے 26 جنوری کو خالصتانی پرچم لہرانے پر انعام کے اعلان کے سوال پر چودھری نے کہاکہ جو لوگ ایسا کہہ رہے ہیں وہ ملک کے مفاد میں نہیں بول رہے ہیں، یہ غداری کی بات ہے، جو لوگ ایسی باتیں کر رہے ہیں، پورا ملک ان پر نگاہ رکھے ہوئے ہے۔انہوں نے کہاکہ جو مادروطن سے محبت کرتے ہیں وہ کبھی بھی اپنی قوم کا سر نہیں جھکنے دیں گے۔ 26 جنوری ہو یا یوم آزادی، یہ ہمارے قومی تہوار ہیں، اگر ایسا واقعہ پیش آتا ہے تو یہ ملک کی عزت نفس پر سوالیہ نشان ہوگا۔انہوں نے کہاکہ میں کسان لیڈران سے گزارش کرتا ہوں کہ اس طرح کے ٹریکٹر ریلی کا پروگرام منسوخ کیا جائے تاکہ ملک کی خود اعتمادی پرچوٹ نہ آئے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ کیا کسان لیڈران کو ٹریکٹر ریلی کے لئے اکسایا جارہا ہے؟ انہوں نے کہا کہ کسان لیڈران کو سمجھنا چاہئے کہ اگر ان کے سابقہ مطالبات پر بات چیت ہوگی تو یقینی طور پر کوئی حل تلاش کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ دوسری صورت میں خالصتان نواز لوگ آسکتے ہیں یا ایسے لوگ جو کسانوں کے کاندھوں پر بندوق رکھ کر چلا سکتے ہیں تاکہ وہ اس تحریک کا فائدہ اٹھاسکیں۔ ہندوستانی کسان ان قوانین کی حمایت میں ہیں اور کسان لیڈران کو یہ سمجھنا چاہئے۔

You might also like