Baseerat Online News Portal

گجرات کی دوا ساز کمپنی ’کرونا‘ کرونا بحران میں ہوئی مشہور

کاروبار کے مالی سال میں 100 کروڑ روپے کا ٹرن اوور !
احمد آباد،۱۵؍جنوری ( بی این ایس )
کورونا نامی مسلط کردہ مفروضہ بحران نے دنیا میں ایسی دہشت پھیلائی کہ لوگ اس کا نام سن کر سراسیمہ ہوجاتے ہیں،تاہم گجرات کی ایک دوا ساز کمپنی کے لئے یہ نام منافع بخش سودا بن گیا۔ اطلاع کے مطابق ایک سال میں کمپنی کے کاروبار میں 100 کروڑ کا اضافہ ہوگیا۔احمد آباد کی 16 سال قدیم کرونا ریمیڈیز پرائیویٹ لمیٹڈ ایک متوسط کمپنی ہے، جو دل کے امراض کی متعلقہ دوائیں تیار کرتی ہے۔ سالِ گزشتہ کرونا نامی مفروضہ وبا مسلط کئے جانے کے بعد اس کمپنی کا نام بھی شہرت کا حامل ہوگیا ۔کمپنی کے بانی نیرو مہتا نے میڈیا سے بات چیت کی ۔نیرو مہتانے کہا کہ میری دادی کا نام سورج بین تھا،پہلے ہم ان کے نام سے ایک کمپنی شروع کرنا چاہتے تھے ، لیکن اس سے قبل سن فارما کے نام سے ایک بڑی کمپنی موجود تھی، تو پھر ہم نے سورج سے متعلق انگریزی الفاظ تلاش کرنا شروع کئے،اس دوران ہمیں لفظ ’کرونا‘ ملا، اس کا مطلب ہے طلوع ہوتے سورج کا ہالہ۔ جب سورج طلوع ہوتا ہے، تواس کے آس پاس کے سنہری دائرے کو انگریزی میں ’کورونا‘ کہتے ہیں۔ اس کے علاوہ کرونا کا مطلب بھی کراؤن ہوتا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا اگرچہ وبائی مرض کی وجہ سے لفظ کورونا منفی صورت اختیار کر گیا، لیکن یہ نام ہمارے لئے خیر کا باعث ثابت ہوا ہے۔ احمد آباد کے قریب ہمارا ایک پلانٹ ہے، ایک بورڈپر کرونا لفظ بھی درج ہے، کمپنی کی داخلی گفتگو کے دوران ہم اس بارے میں بات چیت کرتے تھے کہ اب کیا کرنا ہے۔ کورونا کے بجائے ، کورونا علاج’ لکھیں؟ لیکن آخر میں فیصلہ ہوا کہ نام بدلنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اسی نام کی وجہ سے ہم اس مشکل دور میں بھی ڈیل کررہے ہیں ۔ کورونا بحران میں ہی ہم نے پالن پور میں ایک کمپنی اے پی آئی لا چندرا فارما لیب میں اسٹیک لیا۔ اس سے ہمارے آر اینڈ ڈی مضبوط ہوگا،اس کے علاوہ ہمیں پرائیوٹ ایکویٹی سے بھی آفرس مل رہی ہیں، ہمارا نیا پلانٹ جلد ہی شروع ہوگا۔ اس کے ساتھ ہم توقع کرسکتے ہیں کہ رواں مالی سال میں کمپنی کا کاروبار 700 کروڑ روپے کو عبور کر جائے گا، ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ محض ایک اتفاق ہے کہ کوووڈ-9 وائرس کی پہلی نشاندہی کی گئی تھی اور اس کی شکل کراؤن کے جیسے تھی ،اسی لئے اس وائرس کا نام ’کورونا‘ رکھا گیا، ہمارے نزدیک لفظ کورونا کا مطلب ہے بڑھتا ہوا سورج کا سرخ ہالہ، اس سے زندگی میں خیر آتا ہے، یہ نام ہماری نانا کے لئے ایک آشیرواد ہے، یہ کمپنی 6 دسمبر 2004 میںشروع کی گئی تھی۔

You might also like