Baseerat Online News Portal

گلناز کے معاملہ میں قائم مقام ناظم امارت شرعیہ کی انسپکٹرجنرل آف پولس بہارسے ملاقات

پٹنہ:۲۲؍جنوری(عادل فریدی؍بی این ایس)گلناز مرحومہ جسے چند شرپسندوں نے گذشتہ۳۰؍ اکتوبر۲۰۲۰ء اپنی ہوس کا شکار بنانا چاہا اور انکار کرنے اور گلناز کی اپنی طرف سے عزت و آبرو کی حفاظت کی پاداش میں اسے جان گنوانی پڑی تھی، شرپسندوں نے آگ میں جلا کر اس کی قیمتی جان لے لی،یہ معاملہ نہ صرف بہار بلکہ پورے ملک کیلئے افسوسناک بنا،اس واقعہ کے خلاف ملک بالخصوص ریاست کی مختلف تنظیموں اور دھروں نے آوازیں بلند کیں،اورانصاف دلانے اور مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچانے کیلئے اپنی سطح سے کوشش کی۔امیر شریعت بہار ،اڈیشہ و جھارکھنڈ حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی صاحب کی ہدایت پر امارت شرعیہ نے اس کیس کو قریب سے دیکھا اور خود سے اس کیس کی پیروی کرنے کا فیصلہ کیا ،گلناز کی والدہ ،بھائی اور دوسرے سماجی کارکنان اور امارت شرعیہ کے ذمہ داروں کے ساتھ اس سلسلے میں کئی نشستیں ہوئیں،امارت شرعیہ نے اس کیس کی پیروی کرنے اور مظلو موں کو انصاف دلانے کا فیصلہ کیا،مقتولہ کو انصاف دلانے کیلئے تین نامزد ملزموں میں سے ایک کے فرار رہنے پر امارت شرعیہ نے حکومت اور متعلقہ افسران کو توجہ دلائی جس کے نتیجے میں اس کی قرقی ضبطی کی گئی لیکن وہ اب بھی پولس کی گرفت سے باہر ہے ،دوسرے دو ملزم امتحان کے نام پر عارضی ضمانت پر باہر آئے،امارت شرعیہ کے قائم مقام ناظم جناب مولانا محمد شبلی القاسمی نے ڈائرکٹرجنرل آف پولس بہار جناب ایس کے سنگھل سے ان کے آفس میں ملاقات کر کے تیسرے فرار ملزم کی جلد گرفتاری اور بقیہ دو کو عدالتی حکم کے مطابق خود سپردگی کیلئے توجہ دلائی ، ان کے ساتھ امارت شرعیہ کے نائب ناظم جناب مولانا محمد سہیل احمد ندوی صاحب بھی شریک تھے ،ڈائریکٹر جنرل آف پولس بہار نے باتوں کو غور سے سنا اور انہوں نے اس پر فوااری توجہ دیتے ہوئے اسی وقت ایس پی ضلع ویشالی کو فون کر کے اس معاملہ کوانصاف سے دیکھنے اور مجرموں کو فوراً گرفتار کرنے کا حکم دیا اور انہوں نے یقین دلایا کہ مظلوموں کو ضرور انصاف ملے گا اور اس سلسلے میں ہمارا جو بھی تعاون ہوسکتا ہے ہم کریںگے۔ قائم مقام ناظم صاحب نے ڈی جی پی کی اس فوری ایکشن اور اس معاملہ میں ان کی دل چسپی پر اطمینا ن کا اظہار کیا۔

You might also like