Baseerat Online News Portal

رشی گنگا حادثے میں گمشدہ 136 افراد کومردہ قراردینے کا عمل شروع

چمولی ،23؍ فروری ( بی این ایس )
انتظامیہ کی جانب سے رشی گنگا حادثے میں گمشدہ 136 افراد کو مردہ قرار دینے کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔ لاپتہ افراد کے اہل شناخت نہیں ہوئی لاشوں کے ڈی این اے رپورٹ آنے پر گمشدہ لوگوں کے اہل خانہ کوڈی این اے نمونے کے لیے بلایا گیا ہے۔ چمولی ضلع میں ہونے والی تباہی میں ہلاکتوں کی تعداد اب بڑھ کر 68 ہوگئی ہے۔ تاہم ابھی بھی بہت سے مقامات پر راحت کے کام جاری ہیں۔رپورٹ کے مطابق چمولی پولیس نے منگل کے روز کہاکہ اب تک مختلف مقامات سے مجموعی طور پر 70 لاشیں اور 29 انسانی اعضاء برآمد کیے گئے ہیں ، جن میں سے 39 لاشوں اور ایک انسانی اعضا کی شناخت کی گئی ہے۔ اتوار کے روز تپوون سرنگ سے ایک اور لاش برآمد ہوئی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ اتوار کے روز تپوون وشنوگاڈ پن بجلی پروجیکٹ کی سرنگ سے نکالی گئی لاش کی شناخت ستائیس سالہ سنیل بخلا کے نام سے ہوئی ہے ، جو جھارکھنڈ کے ضلع لوہردگا کا رہنے والا ہے۔ اس کے ساتھ ہی تاپوون سرنگ سے اب تک 14 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل ہفتہ کے روز تپوون بیراج سائٹ سے پانچ افراد کی لاشیں ملی ہیں۔ نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (این ڈی آر ایف) ٹیم کے ذریعہ تپوون بیراج سائٹ سے برآمد ہونے والی پانچ لاشوں کی بھی شناخت ہوگئی ہے ۔7 فروری کو چمولی کی وادی رشی گنگا میں تباہی سے متاثرہ علاقوں سے اب تک 68 افراد کی لاشیں ملی ہیں ، جب کہ 136 دیگر افراد لاپتہ ہیں ، جن کی تلاش اور تلاش کے لئے امدادی مہم جاری ہے۔

You might also like