Baseerat Online News Portal

پاکٹولہ میں مفت آئی کیمپ کا انعقاد، 365 مریضوں میں موتیا بند کے 65 مریض ملے 

 

رفیع ساگر /بی این ایس

جالے۔ مقامی بلاک سے متصل بوکھڑا بلاک کے چکوتی پنچایت کے تحت پاکٹولہ ہنومان مندر کے قریب واقع دھرم شالا میں اتوار کو اکھنڈ جیوتی آئی اسپتال مستی چک سارن چھپرہ کے زیر تعاون مفت آئی چیک اپ کیمپ کا انعقاد کیا گیا جس کی نگرانی سابق سرپنچ و بوکھڑا بلاک سرپنچ ایسوسی ایشن کی صدر پتنوکا باشندہ وینا یادو نے کی ۔وینا یادو اور اس کے شوہرنیشنل ہیومن رائٹس کے صدر و سماجی کارکن کلدیپ پرساد یادوگذشتہ کئی سالوں سے انسانی خدمت کے تحت مفت آئی جانچ کمیپ کا انعقاد کرتے آرہے ہیں۔انہوں نے سیتامڑھی کے علاوہ مظفرپور اور دربھنگہ کے سرحدی علاقوں میں کیمپ لگا کر ہزاروں غریب مریضوں کے آنکھ کا علاج کروایا ہے۔علاج کے بعد اب ایسے مریض کو نئی زندگی مل چکی ہے۔

مفت آئی کیمپ کا افتتاح بزرگ للن سنگھ ،نائب پرمکھ آفتاب عالم منٹو اور سابق سرپنچ جلا دیوی نے مشترکہ طور پر فیتہ کاٹ کر کیا۔کیمپ میں ڈاکٹر رویندر کمار سنگھ نے کل 365 غریب لاچار اور معذور مریضوں کے آنکھوں کا معائنہ کیا۔جس میں 65 مریضوں میں موتیا بند کے اثرات پائے گئے 14 مارچ کو انسٹی ٹیوٹ کے اسپتال لے جاکر لینس لگوا کر انہیں مفت عینک ،کھانا اور دوا دیکر مکمل علاج کروایا جائے گا۔ اگلا کیمپ 07 مارچ کو جالے بلاک کے کمل پور میں ہوگا ۔ اس کیمپ میں مکھیا للت کمار چودھری ، سرپنچ صورت لال ٹھاکر ، پنچایت سمیتی رکن ایشور داس ، وارڈ ممبر سنجیو کمار رام ، للت پاسوان ، چندرموہن ٹھاکر ، جتیندر کمار ، نیاز احمد صدیقی ، رام اقبال ساہ ، سنجے پنڈت ، ڈاکٹر رام بابو، منیش کمار، روشن کمار ، کوشل کشور گپتا ، پرمود کمار ساہ اور وکاش کمار سمیت کئی افراد شامل تھے۔

 

You might also like